PDA

View Full Version : بہت نزدیک آتے جا رہے ہو



نگار
06-19-2014, 01:08 PM
گُم اپنی محبت میں دونوں، نایاب ہو تم نایاب ہیں ہم​

کیا ہم کو کُھلی آنکھیں دیکھیں، اِک خواب ہو تم اِک خواب ہیں ہم​

کیا محشر خیز جُدائی ہے، کیا وصل قیامت کا ہو گا​
جذبات کا اِک سیلاب ہو تم، جذبات کا اِک سیلاب ہیں ہم​

آنکھیں جو ہیں اپنے چہرے پر، اِک ساون ہے اِک بھادوں ہے​
اے غم کی ندی تو فکر نہ کر، اِس وقت بہت سیَراب ہیں ہم​

اِس وقت تلاطم خیز ہیں ہم، گردش میں تمہیں بھی لے لیں گے​
اِس وقت نہ تیَر اے کشتئ دل، اِس وقت تو خُود گردَاب ہیں ہم​

اِک ہنس پرانی یادوں کا، بیٹھا ہوا کنکر چنُتا ہے​
تپتی ہوئی ہجر کی گھڑیوں میں، سُوکھا ہوا اِک تالاب ہیں ہم​

اے چشم فلک، اے چشم زمیں، ہم لوگ تو پھر آنے کے نہیں​
دو چار گھڑی کا سپنا ہیں، دو چار گھڑی کا خواب ہیں ہم​

کیا اپنی حقیقت، کیا ہستی، مٹی کا ایک حباب ہیں ہم​
دو چار گھڑی کا سپنا ہیں، دو چار گھڑی کا خواب ہیں ہم​

saba
06-19-2014, 07:55 PM
زبردست بہت بہت اچھی شاعری ، نائس ، اچھی شئیرنگ کرنے پر آپکا بہت شکریہ

نگار
06-19-2014, 08:21 PM
شکریہ کا بٹن تو دبا دیتیں

پسند کرنے کا بہت بہت شکریہ