PDA

View Full Version : کیا نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم حاضر ناظر ہیں؟( جدید ایڈیشن)



حافظ اختر علی
07-07-2014, 01:35 PM
کتاب کا نام
کیا نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم حاضر ناظر ہیں؟( جدید ایڈیشن) (http://kitabosunnat.com/kutub-library/kia-nabi-kareem-s-a-w-w-hazir-nazir-hain-jadeed-audition.html)
مصنف
شیخ عبدالرحمن امین (http://kitabosunnat.com/musannifeen/sheikh-abdul-rahman-ameen.html)
ناشر
عطاء اللہ ڈیروی (http://kitabosunnat.com/musannifeen/ataullah-dairvi.html)
http://i1053.photobucket.com/albums/s463/kitabosunnat/TitlePages---Kia-Nabi-KareemSAWWHazir-Nazir-HainJadeedAuditoin.jpg (http://kitabosunnat.com/kutub-library/kia-nabi-kareem-s-a-w-w-hazir-nazir-hain-jadeed-audition.html)

تبصرہ
اللہ کے رسول ﷺ کے بارے میں یہ عقیدہ رکھنا کہ وہ ہر جگہ حاضر او رہر چیز کودیکھتے ہیں ،عقل ونقل ہر دو کےخلاف ہے ۔ نہ آپ اپنی زندگی میں ہرجگہ حاضرو ناظرتھےاور نہ وفات کے بعد۔ یہ عقیدہ بعض بدعتی لوگوں کا ایجاد کردہ ہے جو سراسر ضلالت و گمراہی پر مبنی ہے۔اہل بد عت نے یا تو انتہائی ضعیف اور موضوع روایات واحادیث کا سہارا لیا ہے ۔اور یا پھر صحیح احادیث کی غلط تاویلات کی ہیں ۔اوریہ سب کچھ وہ نبی کریم ﷺ کی شان میں غلوکی بنا پر کرتے ہیں۔قرآنی آیات ،احادیثِ رسولﷺ اوراقوال ِ سلف  سے اس باطل عقیدہ کی تردید ہوتی ہے ۔زیر نظرکتابچہ ’’کیا نبی اکرم ﷺ حاضر وناضر ہیں؟‘‘شیخ عبد الرحمن امین کی کتاب ’’الرد الباهر في مسئلة الحاضر والناظر‘‘کا اردو ترجمہ ہے ۔جس میں انہوں نے نبی کریم ﷺکے ہر جگہ او رہر وقت حاضر وناضر کے باطل عقیدہ کی قرآنی آیات ،احادیثِ رسولﷺ اوراقوال ِ سلف  سے تردید کرتے ہوئے ۔اہل بدعت کے اس باطل عقیدہ کے دلائل کی حقیقت کو بھی خوب بے نقاب کیا ہے ۔تقریبا15 سال قبل مجلس التحقیق الاسلامی نے اس کتابچہ کو طباعت سے آراستہ کیا۔ اس کتابچہ کی افادیت کے پیش نظر اسے کتاب وسنت ویب سائٹ پر اپ لوڈ کیا گیا ہے ۔اللہ تعالی اس کتاب کو لوگوں کے عقائدکی اصلاح کا ذریعہ بنائے (آمین) ( م۔ا)


اس کتاب کیا نبی کریم ﷺ حاضر ناظر ہیں ؟ ( جدید ایڈیشن) کو آن لائن پڑھنے یا ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیےیہاں کلک کریں (http://kitabosunnat.com/kutub-library/kia-nabi-kareem-s-a-w-w-hazir-nazir-hain-jadeed-audition.html)

نگار
07-08-2014, 03:53 AM
یہ عقیدہ بعض بدعتی لوگوں کا ایجاد کردہ ہے جو سراسر ضلالت و گمراہی پر مبنی ہے۔اہل بد عت نے یا تو انتہائی ضعیف اور موضوع روایات واحادیث کا سہارا لیا ہے ۔اور یا پھر صحیح احادیث کی غلط تاویلات کی ہیں

جزاک اللہ
اللہ تعالی سب کو ایسے گمراہی سے بچائے
آمین
خوبصورت شیئرنگ کرنے پہ آپ کا بہت بہت شکریہ