PDA

View Full Version : آزادی پاکستان 14 اگست



شاہنواز
08-14-2014, 01:30 AM
آزادئی پاکستان 14 اگست
آزادئی پاکستان 14 اگست سب جوش و خروش منانے کی کوشش کررہے ہیں لیکن
ادھر اسلام آباد اور پنچاب کا سیاسی موسم بڑا گرم ہے ۔ دھرنا ، انقلاب اور آزادی مارچ یہ سب چل رہا ہے ۔
پوری دنیا کی نظریں پاکستان پر لگی ہوئی ہیں ۔ ہم خود اپنے ہاتھوں اس پاکستان کی رسوائی کررہے ہیں اور پوری دنیا کو اپنا تماشا دکھار ہے ہیں کہ دیکھو کہ ہم ایسی زندہ قوم ہیں کہ اپنے یوم آزادی کو بھی نہ چھوڑا۔ آزادی کا مطلب تو ہم پاکستانی جانتے ہیں نہیں پہلے تو ہم نے 1948 میں کشمیر ہاتھ جانے دیا جبکہ کشمیر تقریبا فتح ہوچکا تھا۔ ہم نے ہی نے ہی اپنے ہاتھوں دوسری بار کشمیر پر لڑی گئی جنگ 1965 کی جیت کے باوجود کشمیر کا کچھ حصہ تو لیا لیکن پھر بھی کشمیر چھوڑ دیا۔ اب ہم پوری طرح ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوچکے تھے ہم زندہ قوم سے مردہ قوم میں تبدیل ہوچکے تھے جی ہاں 1971 کی جنگ میں ہم نے اہنا ایک بازو اپنے بھائیوں کی مدد سے خود ہی کٹوادیا اس کے باوجود ہماری آنکھ نہ کھلی ہم ابدی نیند سوتے رہے ۔ رفتہ ناسور پکتا رہا ہمارے درمیان فرقہ پرستی اور لسانیت پرستی مکلمل طور پر سرائیت کرچکی تھی اسی بناء پر آئے دن کے فسادات ہونے لگے سب سے پہلے پاکستان کے سب سے بڑے شہر اور بزنس کے حب کو نشانہ بنایا گیا جی ہاں کراچی شہر کو اور آج تک کراچی نہیں سنبھل سکا ۔ ایک موقعہ آیا کہ ہم سوتے سے جاگے وہ تھا 1998 کارگل کی جنگ جو کہ ہم نے خود اپنے ہاتھ آئی ہوئی بازی ہاردی ایسے جیسے کرکٹ کا میچ ہو اور 6 بالز پر 2 رن درکا ر ہوں اور وہ ہم نہ بناسکیں یہی 1998 میں ہمارے ساتھ ہوا۔ کشمیر ایک بار پھر ہاتھ سے نکل گیا کھیل ختم نہیں ہوا جاری رہا ہم پاکستانی نہیں رہے ہم مختلف لسانی گروپوں میں تقسیم ہوگئے اور یہ سلسلہ اسی طرح چل رہا ہے یہی وہ وجہ ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں انتہائی شرمناک کام اس 14 اگست کو ہورہا ہے ہم اپنی آئندہ آنے والی نسل کو کیا پیغام دے رہے ہیں۔ بلوچستان آگ کے دھانے پر پہنچ چکا ہے ۔ اس کے زیادہ تر حصوں میں اسکولوں پاکستانی پرچم اور قومی ترانہ پڑھنا جرم قرار دیا جاچکا ہے۔ یہ سب کیوں اور کیسے ہوا ہم سب کی کوتاہیوں کی وجہ سے کہ ہم اپنے آپ میں بس چکے ہیں۔

بےباک
08-14-2014, 05:24 AM
سچ لکھا ہے آپ نے ، ہم کس منہ سے جشن آزادی منائیں ، جب کہ ہماری آزادی خرافات ، فسادات ، لوٹ گھسوٹ اور بے اتفاقی میں گم ہو چکی ہے ،
ایسے میں بھی ہم جینے کی تمنا رکھتے ہیں ، اور کوشش کرتے ہیں کہ ہم ایک کامیاب قوم بن سکیں ،
اگست کی 14 تاریخ کی نسبت سے آزادی ٹرین چلائی جا رہی ہے اس کی تصویری جھلکیاں دیکھیں ،


http://express.pk/wp-content/uploads/2014/08/278708-Train-1407780918-286-640x480.jpghttp://express.pk/wp-content/uploads/2014/08/278708-Train-1407780981-576-640x480.jpghttp://express.pk/wp-content/uploads/2014/08/278708-Train-1407780882-207-640x480.jpghttp://express.pk/wp-content/uploads/2014/08/278708-Train-1407780843-904-640x480.jpg