نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: یارب دل مسلم کو وہ زندہ تمنا دے

  1. #1
    ناظم خاص تانیہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    مقام
    گجرات
    پيغامات
    7,868
    شکریہ
    949
    880 پیغامات میں 1,107 اظہار تشکر

    یارب دل مسلم کو وہ زندہ تمنا دے

    یا رب دل مسلم کو وہ زندہ تمنا
    یا رب دل مسلم کو وہ زندہ تمنا دے

    جو قلب کو گرما دے جو روح کو تڑپا دے
    پھر وادی فاران کے ہر ذرہ کو چمکا دے

    پھر شوق تماشا دے پھر ذوق تقاضا دے
    محروم تماشا کو پھر دیدا ہ بینا ہے
    دیکھا ہے جو کچھ میں نے اوروں کو بھی دکھلا دے
    بھٹکے ہوئے آہو کو پھر سوئے حرم لے چل

    اس شہر کے خوگر کو وسعت صحرا دے
    پیدا دل ویران میں پھر شورش محشر کر
    اس محمل خالی کو پھر شاہد لےلا دے
    اس دور کی ظلمت میں ہر قلب پریشان کو
    وہ داغ محبت دے جو چاند کو شرما دے
    رفعت میں مقاصد کو ہم دوش ثریا کر
    خودداری ساحل دے آزادی دریا دے
    بے لوث محبت ہو بے باک صداقت ہو
    سینے میں اُجالا کر دل صورت مینا دے
    احساس عنایت کر آثار مصیبت کا
    امروز کی شورش میں اندیشہ فردا دے
    میں بلبل نالاں ہوں اک اُجڑے گلستان کا
    تاثیر کا سائل ہوں محتاج کو داتا دے
    __________________



  2. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,161
    شکریہ
    2,127
    1,234 پیغامات میں 1,606 اظہار تشکر

    جواب: یارب دل مسلم کو وہ زندہ تمنا دے

    بہت ہی خوب
    ہم کو کمال حاصل ہے غم سے خوشیاں نچوڑ لیتے ہیں ۔
    اردو منظر ٰ معیاری بات چیت

  3. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے بےباک کا شکریہ ادا کیا:

    تانیہ (08-12-2015)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University