نتائج کی نمائش 1 تا: 1 از: 1

موضوع: تقدیر پر شاکر رہنا

  1. #1
    معاون
    تاريخ شموليت
    Jul 2012
    پيغامات
    83
    شکریہ
    2
    30 پیغامات میں 39 اظہار تشکر

    تقدیر پر شاکر رہنا

    از صباملک


    تقدیر
    رامو کاکا : ملازم
    بیٹوا : مالکن کی بیٹی ، رانی


    رامو کاکا : کیا بات ہے بیٹوا بڑی خوش نظر ارہی ہو ؟
    رانی : رامو کاکا ، یہ تصویر ممی اور پاپا نے میرے لیے رشتہ ڈھونڈا ہے ،
    رامو کاکا : واہ بیٹوا! یہ تو بڑا اچھا لگ رہا ہے تمہیں کیسا لگے ؟
    رانی : مسکراتے ہوے رامو کاکا جو میرے ممی اور پاپا کو پسند وہ ہی میری پسند ہے !
    رامو کاکا : واہ ، بیٹوا والدین کی پسند ان کے تجربے کی روشنی میں کیے گے فیصلے ہمیشہ کامیاب ہوتے ہیں ، تقدیر کا فیصلہ خود کرو یا والدین کرے ، ملتا وہی ہے جو تقدیر میں ہوتا ہے ۔ والدین کی دعا کے ساتھ رخصت ہونے والی بیٹیاں سدا سکھی رہتی ہے ۔
    رانی : بھاگتی ہوئی ، ممی ، پاپا کے پاس گئی اور تصویر واپس کرتے ہوے مسکرا دی
    ممی پاپا : ممی پاپا کے چہرے فرحت جزبات سے کھل اٹھے ، اور اسمان کی طرف ہاتھ بلند ہوےدعا کی ہماری بیٹی کو سدا سکھی رکھنا ۔
    تقدیر کے فیصلے ہی لڑکیوں کا مقدر ہے سمجھدار بیٹیاں ، اپنے والدین کی عزت کو دوبالا کرتے ہوے تقدیر کے فیصلے کےآگے سر تسلیم خم کر دیتی ہیں یہی ان کی فرمابرادری اور والدین کی عزت اوور شان و شوکت ہے اور رب العزت کی رضا ہے !
    ملتا وہی ہے جو تقدیر میں لکھا ہوتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    خوش رہیں خوشیاں بانٹیں
    اللہ نگہبان
    [size=x-large][align=center] قران ایک مکمل ضابطہ حیات ہے علم کے بغیر عمل کرنا ممکن نہیں
    اور اچھے عمل کے بغیر انسان کی نجات نہیں، قران کا علم حاصل کرو اور فلاح پاو
    [/align][/size]

  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے روشن خیال کا شکریہ ادا کیا:

    بےباک (02-26-2016)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University