نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: سوری

  1. #1
    معاون
    تاريخ شموليت
    Jul 2012
    پيغامات
    83
    شکریہ
    2
    30 پیغامات میں 39 اظہار تشکر

    سوری

    از صباملک


    السلام علیکم و رحمتہ و برکاتہ




    ! آئیے اج سوری کے ساتھ اپنے فرائض کو پورا کریں ،،،،


    سوری ایک چھوٹا سا لفظ ہے مگر اپنی اہمیت کے لحاظ سے دوسروں کے دل میں گھر بنا لیتا ہے دوسروں کو انجانے اور جانے میں دی گئ تکلیف کا بہتریں ازالہ ہے کسی کو دی گئی تکلیف کو محسوس کرنے کے لیے ہمیں اپنےاپ کو جاگنا پڑتا ہے تو لوگوں کے احساسات خود ہی جاگ جاتے ہیں ۔۔۔۔۔۔ یہی جذبہ اور احساسات، انسانیت کو فروغ دیتے ہیں ،،،،،، کچھ کھو کر کچھ حاصل کرنا پڑتا ہے،،،،،،، ۔ جو اپنی نظروں میں جھک جاتا ہے وہ دوسروں کی نظروں میں سر بلند ہوجاتا ہے ۔۔۔ پھر سوری کرنے کا موقع ملے یا نہ ملے ۔۔۔لمحہ لحمہ عبادت ہے ۔۔۔ عاجزی اور انکساری اسلام دین کا حصہ ہے ۔۔۔


    اور رحمان کے ( خاص ) بندے وہ ہیں جو زمین پر عاجزی کے ساتھ چلتے ہیں


    ( الفرقان 63)




    انسان خود نہی مرتا ،،، اسے انا مار دیتی ہے ۔۔۔۔ انسان دوسروں کی نظرمیں خود نہی گرتا ،،،، اسے انا گرا دیتی ہے ،،،انسان خود برباد نہی ہوتا،،، اسے ضد برباد کردیتی ہے ،،،،، ۔۔۔۔۔


    شیطان نے بھی رب العزت کو انا کا ہی جواب دیا تھا کہ" جب اللہ تعالی نے فرشتوں کی جماعت اور ابلیس کو حکم دیا کہ آدم عیلہ السلام کو سجدہ کرو تو ابلیس نے جواب دیا میں تو آگ سے بنا ہوں ۔۔ اورآدم علیہ السلام کا پتلا مٹی سے بنا ہے ۔۔۔۔ میں اس سے افضل ہوں ۔۔۔ اس کے سامنے کیسے سر جھکاؤں " ؟ اور اللہ کے حکم کی نافرمانی کی ۔۔۔۔ اور سجدہ سے انکار کیا،،،،،، اس کی انا نے اسے برباد کردیا ۔۔۔۔ اس کی انا نے اسے رب العزت کی نظروں میں گرا دیا ۔۔۔۔ اور ہمیشہ کے لیے اللہ کی رحمت سے دور ہوگیا،،، اسکی انا کا ٹھکانہ جہنم بن گیا ۔




    حضرت موسی علیہ السلام نے ابلیس سے کہا ۔۔ اپنی ضد چھوڑو ،، اپنے کیے پر نادامت محسوس کرو اور آدم علیہ السلام کے قبر کو ہی سجدہ کر دو تاکہ تم جہنم کا ایندھن بننے سے بچ جاو ۔۔ شیطان نے جواب دیا، " اگر میں نے سجدہ کرنا ہوتا تو میں اس وقت ہی کر لیتا ، میں تو اب بہت سے لوگوں کو اپنی طرح گمراہ اور انا پرستی میں مبتلا کرکے جہنم کا ایندھن بناوں گا ۔۔۔۔۔۔۔ صراط مستقیم بھی ان کو لوگوں کونصیب ہوتی ہے جو سیدھے راستے کے متلاشی ہوتے ہیں اور سیدھے راستے پر گامزن ہونا چاہتے ہیں ۔۔۔


    اچھی بات سیکھنا ہو تو انسان شیطان سے بھی سیکھ لیتا ہے ۔۔۔۔ اگرشیطان اپنی جاب اور ذمہ داری پوری ایمانداری سے انجام دے رہا ہے تو ہم اشرف المخلوقات ہوتے ہوے بھی ۔۔۔ اپنی زمہ داریوں سے لاپرواہ کیوں ہیں ۔۔۔؟ ائیے ایک بار پھر سوری کے ساتھ ایک تسبیح کے دانے بن جائیں ۔۔۔۔




    انسان کچھ بھی نہی ہے مٹی کا پتلا ہے پنجرے کا پنچھی ہےنجانے کب اور کس وقت مالک حقیقی پنجرے کا دروازہ کھول کر اپنے پاس بلا لے ۔۔۔ اس قبل ہم اپنے ہر لمحہ کو انسانیت کی خدمت میں گزار دیں ،،، رب العزت نے ہمیں دنیا میں اسلیے بھیجا تاکہ وہ ہمیں ازمائیں کہ ہم اس کے احکامات کی تعمیل کرتے ہیں ؟ ۔۔۔۔۔ لمحہ لحمہ عبادت ہے ۔۔۔۔۔ نجانے کس گلی میں زندگی کی شام ہوجاے اور نیکی کرنے کا بھی وقت نہ ملے ۔۔۔ جب رب العزت کے پاس جائیں تو ہمارے اعمال کے فولڈر میں کسی کی دل شکنی نہ ہو کسی کے حقوق کی پائمالی نہ ہو ہمارا کوئی شکایت کرنے والا نہ ہو تو رب العزت کے کہٹرے میں سزا کس بات کی ؟ سزا اور جزا تو رب العزت کا وعدہ ہے !


    ائیےآج ہی اپنی انا کا گلا گھونٹ کر انسانیت کی تسبیح کے دانے بن جائیں ایک بار پھر عاجزی اور انکساری کے ساتھ ان ساتھیوں کو دعوت دیں جو ہم سے ناراض ہیں ۔۔۔ اس کار خیر میں وہ صاحبان اور صاحبہ حصہ لے کر اپنی احساس مرحومی کا اور ندامت کا احساس دلائیں جو ان سے جانے یا انجانے میں سرزد ہوا ۔۔ تاکہ انے والوں کے دلوں میں جو دردکے وہ نقوش ہیں وہ مٹ جائیں ۔۔۔۔




    ۔۔۔۔ ۔ سوری بظاہر ایک چھوٹا سا لفظ ہے مگر اپنی اہمیت کے لحاظ سے اعلی اور ارفع ہے جو جھک جاتا ہے وہی دوسروں کی نظروں میں بلند ہوجاتا ہے ۔ یہ وہی احساس ہے جوا نسانیت کے رشتے کو جیت لیتا ہے انسانیت کو جتنے کے لیے اپنے اپ کو ہارنا پڑتا ہے یعنی اصولوں کو اپنانا پڑتا ہے اصل میں یہ ہار نہی بالکہ جیت ہے اگر ہم نے ہار کر کسی کو جیت لیا ہےتو یہی ہماری جیت ہے یہی ہماری کامیابی ہے کسی ایک انسان کو جیت لیا تو گویا پوری انسانیت کو جیت لیا ،،،،


    کہنا اور سننا ہی زندگی کی بہار ہے ۔۔۔ کچھ لوگوں کی اچھی یادیں ہمارےدل و دماغ پر اپنے نقوش چھوڑ جاتی ہیں اور مرنے کے بعد بھی کچھ لوگ ہمارے اتنے قریب ہوتے ہیں یوں معلوم پڑتا ہے کہ ان کی باتیں ان کے احساسات اج بھی ہمارے ساتھ ہیں ۔


    اور کچھ ایسے لوگ بھی ہیں جنہیں اپ ہزاروں بار بھی ملتے ہیں تو کوئی اچھا تاثر نہی چھوڑتے ہیں ۔۔۔۔ لیکن کچھ لوگ ایک بار ملتے ہیں تو نا منٹے والا تاثر چھوڑ جاتے ہیں ۔ اور ہم انہیں بار بار یاد کرتے ہیں ۔


    یہی ہمارے تجربات ہیں جن کی روشنی میں ہم اگے بڑھتے ہیں ۔ اگر ہم یہ کہہ کر خاموش ہو جاتے ہیں ہم سب جانتے ہیں تو یقیناً ہم اپنے اوپر ترقی کے سارے راستے بند کر لیتے ہیں ۔اسلیے ہر دن ایک نیا تجربہ ہوتا ہے انسان ماں کے پیٹ سے لیکر قبر کی لحد تک سیکھتا ہے ۔۔


    انسان کبھی عمر سے بڑھا نہی ہوتا ہمیشہ وہ تجربےسے بڑا ہوتا ہے ۔


    رمضان مبارک کی امد امد ہے جس کے کاندھے پر زیادتی کی نجس ہو وہ پاکیزہ نہی ہوتا اور جو پاکیزہ نہی اسی کی کوئی عبادت قبول نہی ہوتی




    نبی اکرم ﷺ نے اخری خطبہ میں فرمایا کہ کفار ناپاک ہیں نجس ہیں اور انہیں خانہ کعبہ کی مسجد کے قریب انے کو منع فرمایا : یہ ظاہر نجاست نہی تھی نہ وہ پلید تھے بالکہ یہ وہ نجاست ہے جو شرک و کفر کی نجاست ہے جس سے یہ پلید ہیں ۔اسی طرح حقوق العباد کی نجاست سے ہمارے جسم نجاست آلود ہیں جب تک ہم پاک نہ ہوجائیں گے تب تک ہماری عبادات ٬قبول نہی ہوتیں ۔۔۔۔۔۔


    اللہ خود پاک ہے اور پاکیزگی کو پسند فرماتا ہے ۔۔۔


    کوئی رشتہ بھی ہو اسے اخلاق سے نبھاو ۔۔


    ،،، یہی درس اسلام دیتا ہے جو جھک گیا وہ سر بلند ہوگیا ۔ اور نبی ﷺ کی زات مبارکہ ہمارے لیے اخلاق کا بہترین نمونہ ہے ۔۔۔۔




    یوں لگتا ہے زندگی کتنی سستی ہے اور انسانیت کتنی مہنگی جو کسی داموں نہی ملتی ۔۔۔ وہ زندگی جس کا لحمہ بھر، بھروسہ نہی ۔۔۔۔ اور ہم انجانے میں اپنی سوچوں کو یہ رنگ دیتے ہیں شاہد ہم نے تو یہ دنیا چھوڑنی نہی۔۔۔


    انا ۔۔۔ اور ضد کو اپنا موقف بنا لیتے ہیں بلاوجہ وہ بھی کر جاتے ہیں جو انسانیت کو مجروع کرتا ہے ۔ ۔۔۔۔ کسی کے مجروع احساسات اور جزبات ہم اس وقت تک محسوس نہی کرتے ہیں جب تک ہم خود اس انگارے سے جھلستے نہی ہیں تب تک اپنی برائی کا احساس نہی ہوتا ہے کہ ہماری برائی دوسروں کے لیے کتنی کربناک پردرد ہے ۔۔۔


    یہ زندگی تو امانت ہے کب مالک حقیقی کی طرف لوٹ جائیں اور کب مالک کا بلاوا اجاے ۔۔۔ کل ہو نہ ہو ،،، کیوں نا ہم ان لمحات کو سیمٹ لیں ،،، لمحہ لمحہ عبادت ۔۔۔۔ نا جانے کس گلی میں زندگی کی شام ہوجاےاور یہ زندگی ہمیں اتنی مہلت بھی نہ دئے کہ ہم کچھ نیکی بھی حاصل نہ کر سکے ۔۔۔


    اور جو وقت گزر جاے وہ واپس نہی اتا جو وقت سامنے ہے اسے سیمٹ لیں


    یہی وقت کی نزاکت ہے اور گزرے ہوے وقت کا ازالہ ہے


    ۔۔۔۔۔ تسبیح کے دانے خود تسبیح میں نہی اجاتے ہیں ان کو اکٹھا کرنا پڑتا ہے ایک ایک دانہ پرونا پڑتا ہے پھر انسانیت کی تسبیح بن جاتی ہے ،،،، جو اس تسبیح کا ورد کرتا ہے وہ حقوق العباد اور حقوق اللہ کا فرائض انجام دیتا ہے ۔۔۔۔۔ بیشک ہراچھا عمل جزا اور برا عمل سزا ہے ۔۔۔۔




    حضرت انسؓ سے روایت ہے نبی اکرم ﷺ نے فرمایا :


    لوگوں کے ساتھ اسانی کا برتاو کرو اور ان کے ساتھ سختی کا برتاؤ نہی کرو،خوش خبریاں سناو اور نفرت نہ دلاؤ


    ( بخاری )




    میرا پیغام انسانیت ہے دکھی انسانیت سے محبت کرو سب کی قدر کرو جولوگ اس دنیا سے رخصت ہوجاتے ہیں وہ لوٹ کرکبھی نہی اتے ۔۔۔ اور ہم اج جن کے درمیان موجود ہیں کل ہو نہ ہو ۔۔۔۔۔ ان کی قدر کریں تاکہ جدا ہونے پر احساس ندامت نہ ہو


    اگر کسی کو ہم سے شکایت ہے تو سوری کیونکہ حقوق العباد کی معافی نہی ہے بس مجھے یہی کہنا ہے !!!!! سب سے سوری !


    خوش رہیں خوشیاں بانٹیں


    اللہ نگہبان
    [size=x-large][align=center] قران ایک مکمل ضابطہ حیات ہے علم کے بغیر عمل کرنا ممکن نہیں
    اور اچھے عمل کے بغیر انسان کی نجات نہیں، قران کا علم حاصل کرو اور فلاح پاو
    [/align][/size]

  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل 2 اراکین نے روشن خیال کا شکریہ ادا کیا:

    بےباک (04-28-2016),نگار (05-22-2016)

  3. #2
    معاون
    تاريخ شموليت
    Jul 2012
    پيغامات
    83
    شکریہ
    2
    30 پیغامات میں 39 اظہار تشکر

    جواب: سوری

    السلام علیکم و رحمتہ اللہ وبرکاتہ

    بیشک اخلاق کافر کو بھی مسلمان بنا دیتا ہے ،،،، نبی علیہ السلام کی ذات مبارک ہمارے لیے عملی نمونہ ہے ،،، نبی علیہ السلام کے اخلاق سے کفار مسلمان ہوئے ۔۔۔ لیکن ہم نے اپنی ابھی اور اصلاح کرنی ہے ،، کلمہ پڑھ کر ہم مسلمان ہوئے مگر ابھی اسلام ہمارے د لوں میں داخل نہیں ہوا ،،، جس دن داخل ہو گیا اس دن ہم مومن ہوگے پھر کسی کو ہم سے شکاہت نہ ہو گی ۔۔ جزاک اللہ خیر
    [size=x-large][align=center] قران ایک مکمل ضابطہ حیات ہے علم کے بغیر عمل کرنا ممکن نہیں
    اور اچھے عمل کے بغیر انسان کی نجات نہیں، قران کا علم حاصل کرو اور فلاح پاو
    [/align][/size]

  4. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے روشن خیال کا شکریہ ادا کیا:

    بےباک (04-28-2016)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University