نتائج کی نمائش 1 تا: 3 از: 3

موضوع: وہ کہتے ہيں رنجش کي باتيں بھُلا ديں

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    4,149
    شکریہ
    652
    713 پیغامات میں 740 اظہار تشکر

    وہ کہتے ہيں رنجش کي باتيں بھُلا ديں

    وہ کہتے ہيں رنجش کي باتيں بھُلا ديں
    محبت کريں، خوش رہيں، مسکراديں
    غرور اور ہمارا غرور محبت
    مہ و مہر کو ان کے در پر جھکا ديں
    جواني ہوگر جاوداني تو يا رب
    تري سادہ دنيا کو جنت بناديں
    شب وصل کي بےخودي چھارہي ہے
    کہوتو ستاروں کي شمعيں بجھاديں
    بہاريں سمٹ آئيں کِھل جائيں کلياں
    جو ہم تم چمن ميں کبھي مسکراديں
    وہ آئيں گے آج اے بہار محبت
    ستاروں کے بستر پر کلياں بچھاديں
    بناتا ہے منہ تلخئ مے سے زاہد
    تجھے باغ رضواں سے کوثر منگا ديں
    تم افسانہ قيس کيا پوچھتے ہو
    آؤ ہم تم کوليليٰ بنا ديں
    انہيں اپني صورت پہ يوں کب تھا
    مرے عشق رسوا کو اختر دعا ديں

  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    Maria (10-26-2019)

  3. #2
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Oct 2019
    پيغامات
    566
    شکریہ
    598
    443 پیغامات میں 447 اظہار تشکر

    جواب: وہ کہتے ہيں رنجش کي باتيں بھُلا ديں

    بہت عمدہ
    اگر معلوم ہو تو
    شاعر کا نام لکھ دیا کریں

  4. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے Maria کا شکریہ ادا کیا:

    حبیب صادق (01-03-2020)

  5. #3
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    4,149
    شکریہ
    652
    713 پیغامات میں 740 اظہار تشکر

    جواب: وہ کہتے ہيں رنجش کي باتيں بھُلا ديں

    پسند اور رائے کا شکریہ

اس موضوع کے کلیدی الفاظ (ٹیگز)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University