[size=large]

وزارت کے عہدے پر

ایک سردارجی وزارت کے عہدے پر فائز تھا اور وہ کینیڈا کے دورے پر چلا گیا
وہاں پر اس کی برابری کے وزیرنے سردار جی کو اپنے گھر میں کھانے کی دعوت دی
جب سردارجی اس کے گھر گیا اوراسکی اتنی خوبصورت کوٹھی دیکھی تو اسے پوچھا
کہ لاسٹ ٹائم جب میں آیا تھا تو آپ کا گھر توپرانا سا تھا اب اتنی شاندار کوٹھی کیسے
بنالی تواسنے کہا آؤ چھت کے اوپر جاکر بات کرتے ہیں چھت پر پہنچےتو کینیڈین نے کہا
اب بتاؤ کیا بات ہے تو سردارجی نے کہاکہ لاسٹ ٹائم جب میں آیا تھا تو آپ کا گھر توپرانا سا تھا اب اتنی شاندار کوٹھی کیسے بنالی تو وہ بولا سامنے اُس روڈ کو دیکھو تو سردار بولا بہت شاندار روڈ ہے
کینیڈین نے کہا کے مجھے روڈ کا ٹھیکا ملا تھا کچھ کا روڈ بن گیا کچھ کی یہ کوٹھی
کچھ عرصے بعد وہ کینیڈین سردار جی کے پاس آگیا تو سردارجی سے کہا کہ لاسٹ ٹائم جب میں آیا تھا تو آپ کا گھر توپرانا سا تھا اب اتنی شاندار کوٹھی کیسے
بنالی تواسنے کہا آؤ چھت کے اوپر جاکر بات کرتے ہیں چھت پر پہنچےتو سردار جی نے کہا اب بتاؤ کیا
بات ہے تو کینیڈین نے کہاکہ لاسٹ ٹائم جب میں آیا تھا تو آپ کا گھر توپرانا سا تھا اب اتنی شاندار کوٹھی کیسے بنالی تو وہ بولا سامنے اُس روڈ کو دیکھو تو کینیڈین بولا سامنے تو روڈ نہیں ہے
صرف جنگل ہے سردار جی بولا اگر وہاں روڈ ہوتا تو یہ کوٹھی نہیں ہوتی

سردارجی کو ايک گدھا ٹکڑ مار کر بھاگ گيا
سردارجی بھی کھوتے کے پيھچے بھاگے
تھوڑی دور جا کر سردارجی کو ايک زيبرا نظر آيا
سردارجی پاس جا کر بولے ـ

ٹريک سوٹ پہن کر مجھے بيوقوف بنا رھا ہے
[/size]