نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری

  1. #1
    ناظم خاص تانیہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    مقام
    گجرات
    پيغامات
    7,873
    شکریہ
    949
    881 پیغامات میں 1,108 اظہار تشکر

    اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری

    اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری
    وہ قیامت ہی غنیمت تھی جو یکجا گزری

    آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن
    اک مری بات نہیں تجھ پہ بھی کیا کیا گزری

    میں تو صحرا کی تپش، تشنہ لبی بھول گیا
    جو مرے ہم نفسوں پر لب ِدریا گزری

    آج کیا دیکھ کے بھر آئی ہیں تیری آنکھیں
    ہم پہ اے دوست یہ ساعت تو ہمیشہ گزری

    میری تنہا سفری میرا مقدر تھی فراز
    ورنہ اس شہر ِتمنا سے تو دنیا گزری
    شاعر احمد فراز

  2. #2
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری

    واہ بہت خوب ۔ شئیرنگ کا شکریہ

متشابہہ موضوعات

  1. سول ایوی ایشن اتھارٹی کا ناکام سوفٹ ویر
    By بےباک in forum پاکستان کے مجرم
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 01-13-2013, 04:47 PM
  2. ایسے ہو جائیں گے ایسا تو کبھی سوچا نہ تھا
    By گلاب خان in forum میری پسندیدہ شاعری
    جوابات: 3
    آخری پيغام: 12-14-2012, 09:13 PM
  3. جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-16-2012, 10:22 AM
  4. جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-03-2012, 10:01 AM
  5. ایسا نہ سوچا تھا
    By اذان in forum قلم و کالم
    جوابات: 2
    آخری پيغام: 09-20-2011, 11:44 AM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University