نتائج کی نمائش 1 تا: 3 از: 3

موضوع: جنت و دوزخ

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    1,759
    شکریہ
    585
    601 پیغامات میں 621 اظہار تشکر

    جنت و دوزخ

    جنت و دوزخ
    حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ آنحضرت ﷺ نے فرمایا جو کوئی صبح اور شام مسجد (نماز کے لئے) جایا کرے وہ جب صبح اور شام کو جائے گا اللہ تعالیٰ بہشت میں اس کی مہمانی کا سامان کردے گا۔
    (بخاری، جلد اوّل، کتاب الاذان حدیث نمبر 628 )
    حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ آنحضرت ﷺ نے فرمایا جو شخص اللہ کی راہ میں جوڑا (دو روپیہ یا دو کپڑے یا اور کوئی چیزیں) خرچ کرے گا اس کو (فرشتے )بہشت کے دروازوں سے پکاریں گے خدا کے بندے یہ دروازہ اچھا ہے۔ پھر جو کوئی مجاہد ہوگا ہو جہاد کے دروازے سے بلایا جائے گا۔ جو زکوٰۃ دینے والا ہوگا وہ زکوٰۃ کے دروازے سے بلایا جائے گا ۔ حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ عنہ نے یہ سن کر عرض کیا میرے ماں باپ آپ ﷺ پر صدقے یا رسول اللہ! اگر کوئی اِن دروازوں میں سے کوئی ایک دروازے سے بھی بلایا جائے تو کوئی حرج نہیں لیکن کوئی ایسا بھی ہوگا جو ان سب دروازوں سے بلایا جائے گا؟ آپ ﷺ نے فرمایا ہاں ایسے لوگ بھی ہوں گے اور مجھے اُمید ہے تم ان لوگوں میں ہوگے۔
    (بخاری، جلد اوّل کتاب الصوم حدیث نمبر 1779 )
    حضرت ابو سعیدخدری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے آنحضرت ﷺ نے فرمایا جب ایمان دار لوگ (قیامت کے دن) دوزخ پر سے گزر جائیں گے تو بہشت اور دوزخ کے درمیان ایک پل پر اٹکائے جائیں گے، اور دنیا میں جو انہوں ایک دوسرے پر ظلم کیا تھا اس کا بدلہ لیا جائے گا۔ جب پاک صاف ہو جائیں گے تو ان کو بہشت کے اندر جانے کی اجازت ملے گی۔ قسم اس کی جس کے ہاتھ میں محمد ﷺ کی جان ہے۔ ہر شخص کو بہشت میں اپنا مکان دنیا کے مکان سے بڑھ کر معلوم ہو گا۔
    (بخاری، جلد اول کتاب المظالم حدیث نمبر 2276 )
    حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اکرم ﷺ نے فرمایا میں قیامت کے دن جنت کے دروازے پر آکر اسے کھلواؤں گا۔ جنت کا چوکیدار پوچھے گا تم کون ہو؟ میں کہوں گا محمد ﷺ وہ کہے گا آپ ہی کے لئے مجھے حکم ہوا تھا کہ آپ ﷺسے پہلے کسی کے لئے بھی دروازہ نہ کھولنا۔
    (مسلم ، کتاب الایمان )
    حضرت صہیب رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ آنحضرت ﷺ نے فرمایا: جب (تمام لوگ) جنت میں چلے جائیں گے تو اس وقت اللہ تعالیٰ ان سے فرمائیں گے کہ کیا تم مزید کچھ چاہتے ہو؟ جنتی عرض کریں گے (اے اللہ) کیا آپ نے ہمارے چہروں کو روشن نہیں کیا؟ آپ نے ہمیں جنت میں داخل نہیں کیا؟آپ نے ہم کو دوزخ سے نجات نہیں دی ؟ رسول اکرم ﷺ نے فرمایا: پھر اللہ ان کے اور اپنے درمیان پردہ اٹھا دیں گے اور جنتی اللہ تعالیٰ کا دیدار کریں گے تو ان کو اس دیدار سے زیادہ کوئی چیز پیاری نہیں ہوگی۔
    (مسلم ، کتاب الایمان )
    حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اکرم ﷺ نے فرمایا۔جنت میں سب سے کم درجہ کا جنتی وہ ہو گا جس سے اللہ تعالیٰ فرمائیں گے کہ تم تمنا کرو۔ وہ تمنا کرے گا ، پھر اللہ تعالیٰ اس سے فرمائیں گے کیا تم نے تمنا کرلی؟ وہ کہے گا ہاں۔ پھر اللہ تعالیٰ اس سے فرمائیں گے کہ تمہارے لئے وہ ہے جو تم نے تمنا کی ، مزید اس جتنا اور بھی لے لو تمہارے لئے وہ ہے جو تم نے تمنا کی، مزید اس جتنا اور بھی لے لو۔
    (مسلم ، کتاب الایمان )


  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    Maria (01-07-2020)

  3. #2
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Oct 2019
    پيغامات
    462
    شکریہ
    487
    408 پیغامات میں 411 اظہار تشکر

    جواب: جنت و دوزخ

    ماشاءاللہ
    اہم اور مفید دینی معلومات شیئر کرنے کا شکریہ
    جزاک اللہ

  4. #3
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    1,759
    شکریہ
    585
    601 پیغامات میں 621 اظہار تشکر

    جواب: جنت و دوزخ

    پسند اور جواب کا شکریہ
    جزاک اللہ خیراً کثیرا

اس موضوع کے کلیدی الفاظ (ٹیگز)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University