نتائج کی نمائش 1 تا: 3 از: 3

موضوع: معروف شہروں کے عرفی نام

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    1,338
    شکریہ
    438
    426 پیغامات میں 446 اظہار تشکر

    معروف شہروں کے عرفی نام

    معروف شہروں کے عرفی نام
    رضوان عطا
    دنیا میں بہت سے شہروں کے عرفی نام یا نِک نیم ہیں۔ شہر کے عرفی نام ان کی پہچان بن جاتے ہیں اور ان سے شہروں کی خاصیت کا اندازہ بھی لگایا جا سکتا ہے۔ بعض اوقات شہر میں رہنے والے اس پر فخر کرتے ہیں۔ ذیل میں چند اہم شہروں کے عرفی ناموں کی وجوہات بیان کی جا رہی ہیں۔ نیویارک… بڑا سیب:امریکی شہر نیویارک کے عرفی ناموں کی فہرست بہت طویل ہے۔ جیسا کہ کبھی نہ سونے والا شہر، گوتھم اور عالمی دارالحکومت۔ اسے نیا ایمسٹرڈیم بھی کہا جاتا ہے کیونکہ یہاں مغربی اقوام کی سب سے پہلی آبادی ولندیزوں نے اسی نام سے قائم کی تھی جس پر بعدازاں انگریزوں نے قبضہ کر کے نام بدل دیا۔ نیویارک کا سب سے مقبول عرفی نام غالباً ’’بڑا سیب‘‘ (دی بِگ ایپل) ہے۔یہ اصطلاح 1900ء کی دہائی کے اوائل سے تحریر میں آ رہی تھی اور اسے سب سے پہلے ’’دی وے فیئر اِن نیویارک‘‘ کے مصنف ایڈورڈ ایس مارٹن نے لکھا۔ لیکن اسے شہرت 1920ء کی دہائی میں ملی۔ شہر کے روزنامے ’’دی مارننگ ٹیلی گراف‘‘ میں کھیلوں پر لکھنے والے جان جے فٹز گیراڈ نے گھڑدوڑ پر ایک کالم لکھنا شروع کیا جس کا نام ’’بڑے سیب کے گرد‘‘ (اِراؤنڈ دی بگ ایپل) رکھا تھا۔ 1970ء کی دہائی میں سیاحت کے فروغ کے سلسلے میں چلائی جانے والی ایک مہم کے بعد اس عرفی نام نے ایک بار پھر مقبولیت پائی۔ جنیوا… امن کا دارالحکومت: سوئٹزرلینڈ کا دوسرا سب سے بڑا شہر جنیوا کو بین الاقوامی شہر کہنا بے جا نہ ہو گا۔ یہ بین الاقوامی سفارت کاری کے اہم ترین مراکز میں سے ہے۔ جنیوا میں اقوام متحدہ کے مختلف اداروں سمیت ریڈکراس جیسی بین الاقوامی تنظیموں کے دفاتر ہیں۔ بالخصوص دو عالمی جنگوں کے بعد یہ حقیقت روزروشن کی طرح عیاں ہو گئی ہے کہ جنگیںسپاہیوں کے ساتھ ساتھ شہریوں کے لیے ہلاکت، دکھ، اذیت اور تباہی کا پیغام لاتی ہیں۔ جنگوں کے اثرات سے بچانے اور بہبود کے لیے جنیوا کنونشن کے معاہدات پر دستخط اسی شہر میں ہوئے۔ عالمی ادارہ صحت اور عالمی ادارہ محنت کے مرکزی دفاتر اسی شہر میں ہیں۔ قیامِ امن کے لیے مذاکرات کا بھی یہ ایک مرکز ہے۔ پس جنیوا کو ’’امن کا دارالحکومت‘‘ کہنا مناسب ہوگا ہے۔ ٹورنٹو…گدلا یارک: آبادی کے لحاظ سے کینیڈا کے سب سے بڑے شہر ٹورنٹو کا عرفی نام ’’گدلا یارک‘‘ (مڈّی یارک) ماضی جتنا مقبول نہیں رہا اور اس کی وجہ بھی ہے۔ ماضی میں جب شہر کی نکاسی کا انتظام نہیں ہوا تھا تو یہاں کیچڑ وغیرہ بہت ہو جایا کرتی تھی اور تب اسے زیادہ تر ’’مڈی‘‘ یا گدلا کہا جاتا تھا۔ اس میں یارک کا اضافہ ان دنوں کی یادگار ہے جب شہر نوآبادی تھا اور شہزادہ فریڈرک، ڈیوک آف یارک کے اعزار میں شہر کا نام ’’ٹاؤن آف یارک‘‘ رکھا گیا تھا۔ اُشوایا… دنیا کا اختتام: اگر آپ جنوب کی طرف بڑھتے چلے جائیں تو بالآخر آپ انٹارکٹیکا یا قطب جنوبی جا پہنچیں گے۔ وہاں قدم رکھنے سے قبل جنوبی امریکا کے ملک ارجنٹائن کا ایک شہر اُشوایا آئے گا۔ مقامی زبان میں اس کا عرفی نام ’’ال فِن ڈل مونڈو‘‘ یعنی دنیا کا اختتام ہے۔ اگرچہ اس سے آگے جنوب میں، کہیں چھوٹی آبادی پورٹو ولیمز (چلی) کے نام سے موجود ہے، لیکن مذکورہ عرفی نام سے مشہور یہی شہر ہے۔ سیاحت کے فروغ کے لیے ارجنٹائن کی حکومت اس نام کو خوب استعمال کرتی ہے۔ لاس ویگاس…گناہوں کا شہر: امریکی شہر لاس ویگاس رات کو جاگتا ہے اور اس دوران جواخانوں اور کلبوں میں گہماگہمی ہوتی ہے۔ سالانہ کروڑوں افراد اس طرح کی سرگرمیوں کے لیے یہاں آتے ہیں اور اسی لیے اسے گناہوں کا شہر کہا جاتا ہے۔ وینکور… بھاری دھواں: بھاری دھواں (بِگ سموک) دنیا کے متعدد شہروں کا عرفی نام ہے۔ 1952ء میں لندن میں بہت زیادہ سموگ کے بعد اسے یہی عرفی نام دیا گیا، اسی طرح جب انیسویں صدی کے اوائل میں سونے کی تلاش کا کام عروج پر تھا تو آسٹریلوی شہر ملبورن کے لیے یہ عرفی نام معروف ہوا۔ وینکور کینیڈا کا ساحلی شہر ہے۔ یہاں صنعت کاری کے دوران دھویں اور دھند سے سموگ پھیل جایا کرتی تھی جس کے بعد اسے بھی مذکورہ عرفی نام دے دیا گیا۔ سڈنی…بندرگاہ شہر: آسٹریلیا کے مشرقی ساحل پر آبادی کے لحاظ سے ملک کا سب سے بڑا شہر سڈنی واقع ہے۔ اس شہر نے بطور بندرگاہ بہت فائدہ اٹھایا ہے۔ اس کے وسیع ساحلوں سے لوگ چہل قدمی، سرفنگ اور کئی دیگر طریقوں سے لطف اٹھاتے ہیں۔ ساحل پر بہت سی مشہور عمارتیں ہیں جن میں سڈنی اوپیرا ہاؤس کو عالم جانتا ہے۔ قاہرہ…ایک ہزار میناروں کا شہر: قاہرہ نہ صرف مصر بلکہ دنیائے عرب کا سب سے بڑا شہر ہے۔ اسے ملک میں فنون، موسیقی اور فلم کا مرکز ہونے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔ جدید قاہرہ کی بنیاد مسلمانوں نے رکھی اور یہ شہر اسلامی تعمیرات سے مالا مال ہے۔ مسلمانوں نے بہت سی مساجد تعمیر کیں اور مساجد میں میناروں کو بہت اہمیت دی جاتی ہے۔ اسی لیے قاہرہ ’’ایک ہزار میناروں کا شہر‘‘ بھی کہلاتا ہے۔ ویانا…خوابوں کا شہر: آسٹریا کا شہر ویاناخوابوں کا شہر بھی کہلاتا ہے اور موسیقی کا شہر بھی۔ یہ آبادی کے لحاظ سے یورپ کے بڑے شہروں میں شامل ہے۔ اسے شاہی شہر بھی کہتے ہیں کیونکہ سلطنت کے مرکز کی حیثیت سے یہاں بادشاہوں نے قیام کیا۔ معروف ماہر نفسیات اور تحلیلِ نفسی کے بانی سگمنڈفرائڈ کا قیام یہیں تھا، اس لیے اسے خوابوں کا شہر کہتے ہیں۔ فرائڈ کے نظریات میں خوابوں کو بہت اہمیت حاصل ہے۔ پیرس…محبت کا شہر: جانے سبب ’’زبانِ محبت‘‘فرانسیسی ہے یا شہر کا رومانوی ماحول، پیرس محبت کے شہر کے عرفی نام سے جانا جاتا ہے۔ انسان، فن، ادب، سماجی علوم اور فلسفے سے محبت کے مارے پیرس کی جانب کھچے چلے جاتے ہیں، اور اسی لیے پیرس نے بہت سے نامور لوگ پیدا کیے۔ بیروت…مشرقِ وسطیٰ کا پیرس: مشرقِ وسطیٰ میں بیروت قدیم شہر ہونے کے ساتھ ساتھ فیشن اور فن کا مرکز ہے۔ بیروت کی ثقافت پر مغربی اثرات خاصے واضح ہیں۔پیرس کی طرح یہاں کے کیفے آباد رہتے ہیں۔ کراچی…روشنیوں کا شہر: آبادی کے لحاظ سے پاکستان کا سب سے بڑا شہر کراچی روشنیوں کا شہر کہلاتا ہے۔ یہ ملک کا صنعتی مرکز اور اہم ترین بندرگاہ ہے، اسی لیے زندگی کی گہماگہمی یہاں شب و روز جاری رہتی ہے۔ قیام پاکستان سے قبل کراچی جب ایک چھوٹے سے قصبے سے بڑا شہر بننے کے سفر کی جانب گامزن تھا تو اس کی سڑکیں لیمپوں سے روشن رہتی تھیں۔ یہاں بجلی کا انتظام بھی قیام پاکستان سے قبل ہو چکا تھا۔



  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    Maria (01-14-2020)

  3. #2
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Oct 2019
    پيغامات
    311
    شکریہ
    312
    262 پیغامات میں 265 اظہار تشکر

    جواب: معروف شہروں کے عرفی نام

    اہم اور مفید معلومات شیئر کرنے کا شکریہ

  4. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے Maria کا شکریہ ادا کیا:

    حبیب صادق (01-16-2020)

  5. #3
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    1,338
    شکریہ
    438
    426 پیغامات میں 446 اظہار تشکر

    جواب: معروف شہروں کے عرفی نام

    پسند اور رائے کا شکریہ

  6. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    Maria (گزشتہ روز)

اس موضوع کے کلیدی الفاظ (ٹیگز)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University