واٹس ایپ کو اکاؤنٹ ڈیلیٹ کرنے کا اختیار ہوگا، نئی پالیسی جاری

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ واٹس ایپ نے ایک نئی پالیسی جاری کی ہے جس کے مطابق اسے تسلیم نہ کرنے کی صورت میں صارف کا اکاؤنٹ ڈیلیٹ کر دیا جائے گا۔

واٹس ایپ کی جانب سے یہ پالیسی ابھی حال ہی میں اپ ڈیٹ کی گئی ہے، جس کے نوٹیفیکیشنز اینڈرائیڈ اور آئی او ایس دونوں قسم کے موبائل صارفین کو بھیج دیے گئے ہیں۔

امریکی کمپنی کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیہ میں تمام صارفین پر واضح کر دیا گیا ہے کہ اگر انھیں نئی پالیسی قبول نہیں ہوگی تو ان کے اکاؤنٹس کو ڈیلیٹ کر دیے جائیں گے۔ واٹس ایپ کی بحالی کیلئے نئی پالیسی کو تسلیم کرنا ضروری ہے۔ اس نئی پالیسی کا اطلاق آئندہ ماہ 8 فروری سے کر دیا جائے گا۔

واٹس ایپ کی نئی پالیسی میں ٹرانزیکشن اینڈ پیمنٹس ڈیٹا کے لیے بھی نئے سیکشن کا اضافہ کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ کنکشنز کی تفصیلات کو بھی اپ ڈیٹ کیا گیا ہے۔

واٹس ایپ کے لیے پرائیویٹ پالیسی اپ ڈیٹ کرنا کوئی نیا کام نہیں ہے، سافٹ ویئر کمپنیوں کی جانب سے پالیسی اپ ڈیٹ کی جاتی رہتی ہے تاہم واٹس ایپ نے اپنے صارفین کو اس نئی پالیسی کو قبول کرنے یا اکاؤنٹ ڈیلیٹ کر دیے جانے کے حوالے سے 8 فروری تک کی ڈیڈلائن دی ہے۔

واٹس ایپ کمپنی کا کہنا ہے کہ اگر کوئی صارف لوکیشن ڈیٹا تک رسائی نہیں دیتا تو وہ کانٹیکٹ میں شامل کسی بھی فرد سے اپنی لوکیشن شیئر نہیں کر سکتا۔