خدا کو اپنے ہم زاد کا انتظار

اداس ہے تو بہت خدایا

کوئی نہ تجھ کو سنانے آیا

وہ سر جو تیرے اجاڑ دل میں

چراغ بن کر چمک رہی ہے

کوئی نہ تجھ کو دکھانے آیا

عجیب حسن مہیب جیسی

خلش جو دل میں کھٹک رہی ہے