حرمت والے چار مہینے

حدیث شریف میں حضرت ابو بکرۃؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا ’’جس دن سے اللہ تعالیٰ نے زمین و آسمان کو پیدا کیا اُس دن سے لے کر آج تک زمانہ اُسی حالت پر گھوم پھر کر واپس آگیا (یعنی اب اس کے دنوں اور مہینوں میں کمی و زیادتی نہیں ہے جو زمانۂ جاہلیت میں مشرک کیا کرتے تھے، بلکہ اب وہ ٹھیک ہوکر اُسی طرز پر واپس آگیا ہے جس طرز پر اپنی ابتدائی اصلی صورت میں تھا) ایک سال بارہ (12) مہینوں کا ہوتا ہے۔ ان میں 4 مہینے عزت و حرمت والے ہیں، جن میں 3 مہینے تو مسلسل ہیں یعنی ذی قعدہ، ذی الحجہ،اور محرم، اور ایک مہینہ (جو اِن سے علیٰحدہ آتا ہے) وہ رجب کا ہے جو جمادی الاخریٰ اور شعبان کے درمیان واقع ہے۔ (بخاری)