نتائج کی نمائش 1 تا: 4 از: 4

موضوع: سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا

  1. #1
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    1,307
    شکریہ
    0
    50 پیغامات میں 68 اظہار تشکر

    سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا

    سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا
    جا تجھے کشمکشِ دہر سے آزاد کیا
    وہ کریں بھی تو کن الفاظ میں تیرا شکوہ
    جن کو تیری نگہِ لطف نے برباد کیا

    دل کی چوٹوں نے کبھی چین سے رہنے نہ دیا
    جب چلی سرد ہوا، میں نے تجھے یاد کیا

    اے میں سو جان سے اس طرزِ تکلّم کے نثار
    پھر تو فرمائیے، کیا آپ نے ارشاد کیا

    اس کا رونا نہیں کیوں تم نے کیا دل برباد
    اس کا غم ہے کہ بہت دیر میں برباد کیا

    اتنا مانوس ہوں فطرت سے، کلی جب چٹکی
    جھک کے میں نے یہ کہا، مجھ سے کچھ ارشاد کیا

    مجھ کو تو ہوش نہیں تم کو خبر ہو شاید
    لوگ کہتے ہیں کہ تم نے مجھے برباد کیا

    [size=x-large] ناراضگی ظاہر کرنا دل میں برائی رکھنے سے بہتر ہے[/size]

  2. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,191
    شکریہ
    2,175
    1,249 پیغامات میں 1,624 اظہار تشکر

    RE: سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا

    بہت خؤب ، اچھی شاعری پیش کی ،شکریہ

  3. #3
    ناظم خاص تانیہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    مقام
    گجرات
    پيغامات
    7,871
    شکریہ
    949
    880 پیغامات میں 1,107 اظہار تشکر

    RE: سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا

    واہ واہ

  4. #4
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا

    واہ بہت خوب۔ شکریہ

متشابہہ موضوعات

  1. سوزِ غم دے کے مجھے اس نے یہ ارشاد کیا
    By تانیہ in forum متفرق شاعری
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-03-2012, 01:30 PM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University