نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: دوست بن کر بھی نہیں ساتھ نبھانے والا

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Nov 2011
    پيغامات
    527
    شکریہ
    31
    49 پیغامات میں 71 اظہار تشکر

    دوست بن کر بھی نہیں ساتھ نبھانے والا

    [size=x-large][align=center]دوست بن کر بھی نہیں ساتھ نبھانے والا
    وہی انداز ہے ظالم کا زمانے والا

    اب اسے لوگ سمجھتے ہیں گرفتار مرا
    سخت نادم ہے مجھے دام میں لانے والا

    صبح دم چھوڑ گیا نکہتِ گل کی صورت
    رات کو غنچۂ دل میں سمٹ آنے والا

    کیا کہیں کتنے مراسم تھے ہمارے اس سے
    وہ جو اک شخص ہے منہ پھیر کے جانے والا

    تیرے ہوتے ہوئے آ جاتی تھی ساری دنیا
    آج تنہا ہوں تو کوئی نہیں آنے والا

    منتظر کس کا ہوں ٹوٹی ہوئی دہلیز پہ میں
    کون آئے گا یہاں کون ہے آنے والا

    کیا خبر تھی جو مری جاں میں گھلا ہے اتنا
    ہے وہی مجھ کو سرِ دار بھی لانے والا

    میں نے دیکھا ہے بہاروں میں چمن کو جلتے
    ہے کوئی خواب کی تعبیر بتانے والا

    تم تکلف کو بھی اخلاص سمجھتے ہو فراز
    دوست ہوتا نہیں ہر ہاتھ ملانے والا
    [/align][/size]

  2. #2
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: دوست بن کر بھی نہیں ساتھ نبھانے والا

    واہ بہت خوب جناب ۔ شئیرنگ کاشکریہ۔

متشابہہ موضوعات

  1. دوست بھی عجیب ہوتے ہیں
    By لاجواب in forum اقوالِ زریں
    جوابات: 5
    آخری پيغام: 05-05-2012, 10:54 AM
  2. دوست بھی ملتے ہیں محفل بھی جمی رہتی ہے
    By ایم-ایم in forum احمد فراز
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-16-2012, 10:31 AM
  3. دوست بھی دشمن نہ تھے دل بھی عدو میرا نہ تھا
    By گلاب خان in forum متفرق شاعری
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-03-2012, 01:14 PM
  4. جوابات: 1
    آخری پيغام: 11-16-2011, 06:59 PM
  5. میں بھی ساتھ چلوں گا
    By تانیہ in forum عجیب و غریب تصاویر
    جوابات: 0
    آخری پيغام: 12-07-2010, 07:50 PM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University