نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: کل رات ہم سخن کوئی بُت تھا خدا کہ میں

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Nov 2011
    پيغامات
    527
    شکریہ
    31
    49 پیغامات میں 71 اظہار تشکر

    کل رات ہم سخن کوئی بُت تھا خدا کہ میں

    [size=x-large][align=center] کل رات ہم سخن کوئی بُت تھا خدا کہ میں
    میں سوچ ہی رہا تھا کہ دل نے کہا کہ میں

    تھا کون جو گرہ پہ گرہ ڈالتا رہا
    اب یہ بتا کہ عقدہ کشا تُو ہوا کہ میں

    جب سارا شہر برف کے پیراہنوں میں تھا
    ان موسموں میں لوگ تھے شعلہ قبا کہ میں

    جب دوست اپنے اپنے چراغوں کے غم میں تھے
    تب آندھیوں کی زد پہ کوئی اور تھا کہ میں

    جب فصل ِ گل میں فکر ِ رفو اہل ِ دل کو تھی
    اس رُت میں بھی دریدہ جگر تُو رہا کہ میں

    کل جب رُکے گا بازوئے قاتل تو دیکھنا
    اے اہل ِ شہر تم تھے شہید ِ وفا کہ میں

    کل جب تھمے گی خون کی بارش تو سوچنا
    تم تھے عُدو کی صف میں سر ِ کربلا کہ میں

    [/align][/size]

  2. #2
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: کل رات ہم سخن کوئی بُت تھا خدا کہ میں

    واہ بہت خوب جناب ۔ شئیرنگ کاشکریہ۔

متشابہہ موضوعات

  1. میں نے مِٹِّی سے مُحَبّت کا صِلہ مانگا تھا
    By تا بی in forum میری پسندیدہ شاعری
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 02-15-2013, 06:15 PM
  2. تمھارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا
    By تانیہ in forum متفرق شاعری
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-03-2012, 12:03 PM
  3. نازِ بیگانگی میں کیا کچھ تھا
    By تانیہ in forum متفرق شاعری
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-02-2012, 09:37 AM
  4. جوابات: 2
    آخری پيغام: 01-15-2011, 11:21 PM
  5. پتھر تھا مگر برف کے گالوں کی طرح تھا
    By گلاب خان in forum میری شاعری
    جوابات: 4
    آخری پيغام: 12-26-2010, 10:07 PM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University