نتائج کی نمائش 1 تا: 3 از: 3

موضوع: کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Nov 2011
    پيغامات
    527
    شکریہ
    31
    49 پیغامات میں 71 اظہار تشکر

    کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

    [size=x-large][align=center] کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے
    کسی کی آنکھ میں رہ کر سنور گئے ہوتے

    سنگار دان میں رہتے ہو آئینے کی طرح
    کسی کے ہاتھ سے گر کر بکھر گئے ہوتے

    غزل نے بہتے ہوئے پھول چن لئے ورنہ
    غموں میں ڈوب کر ہم مر گئے ہوتے

    عجیب رات تھی کل تم بھی آ کر لُوٹ گئے
    جب آگئے تھے تو پل بھر ٹھہر گئے ہوتے

    بہت دنوں سے ہے دل اپنا خالی خالی سا
    خوشی نہیں تو اُداسی سے بھر گئے ہوتے

    [/align][/size]

  2. #2
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

    بہت خوب جناب ۔ شئیرنگ کاشکریہ۔

  3. #3
    رکنِ خاص نگار کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2011
    پيغامات
    5,360
    شکریہ
    663
    357 پیغامات میں 424 اظہار تشکر

    RE: کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

    عجیب رات تھی کل تم بھی آ کر لُوٹ گئے
    جب آگئے تھے تو پل بھر ٹھہر گئے ہوتے


    واہ بہت خوب تانیہ سسٹر شکریہ

متشابہہ موضوعات

  1. جوابات: 311
    آخری پيغام: 07-06-2014, 02:57 AM
  2. جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-16-2012, 10:34 AM
  3. تم جو ہوتے تو ہمیں کتنا سہارا ہوتا
    By ایم-ایم in forum فرحت عباس شاہ
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-13-2012, 06:36 PM
  4. جوابات: 3
    آخری پيغام: 04-21-2011, 06:37 PM
  5. لفظ اندھے کبھی نہیں ہوتے
    By تانیہ in forum شعر و شاعری
    جوابات: 0
    آخری پيغام: 12-07-2010, 03:37 PM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University