نتائج کی نمائش 1 تا: 4 از: 4

موضوع: نئے سال کا غنائیہ

  1. #1
    مبتدی
    تاريخ شموليت
    Nov 2011
    پيغامات
    6
    شکریہ
    0
    0 پیغامات میں 0 اظہار تشکر

    نئے سال کا غنائیہ

    اک مسافت کہ جسے آئے ہیں طے کرکےابھی
    ایک دریا کے علاقے سے جو پار آئے ہیں
    ایسا لگتا ہے کہ تزئینِ محبت کے سوا
    صرف بیگار میں اِک سال گزار آئے ہیں

    آپ کو آج نیا سال مُبارک ہو مگر
    یہ نیا سال بہر طور گزر جائے گا
    طورِ عالم جو اِسی طرح مرے دوست رہا
    زہرِ نفرت تو رگ وجاں میں اُتر جائے گا

    ایک پیمان نئے سال کی چوکھٹ پہ کریں
    عہدِ پُرخار کو گلزار بنائیں گے سبھی
    دَورِ آشوب میں تقدیسِ محبت کی قَسم
    پرچمِ امن کو ہاتھوں میں اُٹھائیں گے سبھی

    ایکدوجے سے جو بندھ جائے تعلق کی گرہ
    ہر شجر وقت کی شاخوں کو سنبھالا دےگا
    آؤ ہر سمت جلاتے ہیں چراغِ اُلفت
    اِنہی راہوں کا ہراِک ذرہ اُجالا دے گا

    سید طاہر واسطی
    (میانچنوں)

  2. #2
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Nov 2011
    پيغامات
    527
    شکریہ
    31
    49 پیغامات میں 71 اظہار تشکر

    RE: نئے سال کا غنائیہ

    واہ نہایت اعلٰی شکریہ الحسنات جی

  3. #3
    ناظم سیما کا اوتار
    تاريخ شموليت
    May 2011
    پيغامات
    2,514
    شکریہ
    409
    125 پیغامات میں 159 اظہار تشکر

    RE: نئے سال کا غنائیہ

    بہت زبردست
    شکریہ

  4. #4
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: نئے سال کا غنائیہ

    واہ بہت خوب۔ شکریہ

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University