[size=medium] نسوانی اور غیر نسوانی ارویوں ، اشاء میں فرق ہوتا ہے
مثلا“ کپڑوں ان کے رنگوں ، جوتیوں میں مردوں اور عورتوں میں کچھ فرق پایا جاتا ہے اس طرح مرد عورتوں سے زیادہ طاقت ور ہوتے ہیں اس کے علاوہ
عورتوں سے تھوڑے اندھیرے اور ڈراونی چیزوں ڈرتے ہیں ، میں نے عام
فطری بات کی ہے دیکھنے میں آتا ہے کہ بعض عورتیں مردو سے بھی زیادہ بہادر ہوتی ہیں نیز کپڑے مرد کے پہننے سے جنس پر کوئی اثر نہیں پڑتا
پوچھنا یہ ہے کہ عورتوں کی لکھی چیزوں مثلا“ شاعری ، نثر میں فرق پایا جاتا ہے یا نہیں کیا آپ کوئی تہریر پڑھ کر جان سکتے ہیں کہ وہ تحریر کسی مرد نے لکھی ہے یا عورت نے بظاہر یہ ایک عام سا سوال ہے لکین اس کے نتیجہ میں جو تجربات ممکن ہیں وہ اندازے سے باہر ہیں ،
جی بالکل خواتین اور حضرات کی تھریروں میں فرق ہوتا ہے ، آپ کو تحریر پرھ کر نسوانیت کا وہ مخصوص تغزل ضرور محسوس ہو گا
آپ کی اس بارے میں کیا رائے ہے ضرور آگاہ کیجئیے گا
[/size]