نتائج کی نمائش 1 تا: 4 از: 4

موضوع: میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو

  1. #1
    مبتدی
    تاريخ شموليت
    Mar 2012
    پيغامات
    17
    شکریہ
    0
    0 پیغامات میں 0 اظہار تشکر

    میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو

    [size=x-large][size=x-large][align=center]میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو
    جو بھی کروں بات مری بات میں تُم ہو

    کل پُکارا کسی کو نام سے تیرے
    ہر وقت مری جان خیالات تُم ہو

    غم غلط ہوتا نہیں ، پی کے بھی دیکھ لیا
    ساغر و مینا و خرابات میں تُم ہو

    جرّاح نے ڈھونڈا بہت قطرہ خُوں نہ ملا
    دل اور جان مری ذات میں تُم ہو

    قریبِ مرگ ہیں جس کے غم میں جعفرؔ
    اُس نے پُوچھا بھی نہیں کیسے حالات میں تُم ہو[/align]
    [/size][/size]

  2. #2
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو

    میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو
    جو بھی کروں بات مری بات میں تُم ہو

    کل پُکارا کسی کو نام سے تیرے
    ہر وقت مری جان خیالات تُم ہو

    واہ بہت خوب جناب۔ بہت اچھی شاعری ہے۔

  3. #3
    رکنِ خاص نگار کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2011
    پيغامات
    5,360
    شکریہ
    663
    357 پیغامات میں 424 اظہار تشکر

    RE: میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو

    جرّاح نے ڈھونڈا بہت قطرہ خُوں نہ ملا
    دل اور جان مری ذات میں تُم ہو

    قریبِ مرگ ہیں جس کے غم میں جعفرؔ
    اُس نے پُوچھا بھی نہیں کیسے حالات میں تُم ہو



    زبردست کمال کی شاعری آپ نے کی ہے۔۔۔۔لا جواب
    شکریہ

  4. #4
    مبتدی
    تاريخ شموليت
    Mar 2012
    پيغامات
    17
    شکریہ
    0
    0 پیغامات میں 0 اظہار تشکر

    RE: میری صُبح ، میری شام ، میری رات میں تُم ہو

    پسندیدگی کے لئے احباب کا بے حد مشکور ھوں۔۔۔۔۔

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University