نتائج کی نمائش 1 تا: 5 از: 5

موضوع: وزیراعظم پاکستان ۔ مجرم قرار

  1. #1
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,140
    شکریہ
    2,103
    1,216 پیغامات میں 1,588 اظہار تشکر

    وزیراعظم پاکستان ۔ مجرم قرار

    توہینِ عدالت کیس میں وزیراعظم مجرم قرار

    سپریم کورٹ نے وزیراعظم iیوسف رضا گیلانی صاحب کو توہین عدالت کیس میں قصور وار ٹہراتے ہوئے عدالت برخاست ہونے تک کی سزا دی۔

    عدالت کے برخاست ہونے کے بعد وزیراعظم مسکراتے ہوئے کمرہ عدالت سے باہر نکلے۔
    توہینِ عدالت کے کسی مقدمہ میں دی جانے والی سزاؤں میں یہ سب سے کم سزا ہے۔ توہینِ عدالت میں زیادہ سے زیادہ سزا چھ ماہ قید ہوسکتی ہے۔

    عدالت کے مطابق وزیراعظم گیلانی نے عدالتی فیصلے کا جان بوجھ کر مذاق اڑایا۔

    یہ فیصلہ سپریم کورٹ نے جمعرات کو سنایا اور اس موقع پر وزیراعظم عدالت کے روبرو پیش ہوئے۔

    ملک کے وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو این آر او مقدمے میں عدالتی حکم پر عمل نہ کرنے پر شروع کیے گئے توہینِ عدالت کے مقدمے کا سامنا تھا۔

    اس سال سولہ جنوری کو سپریم کورٹ کے سات رکنی بینچ نے جسٹس ناصر الملک کی سربراہی میں ’این آر او‘ عملدرآمد کیس میں وزیراعظم کو اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کر کے انہیں پہلی بار انیس جنوری کو خود پیش ہونے کا حکم دیا تھا۔

    تیرہ فروری کو سپریم کورٹ نے وزیراعظم پر فرد جرم عائد کی تھی اور عدالت نے مزید کارروائی اٹھائیس فروری تک ملتوی کر دی تھی۔

    منگل کو سماعت کے بعد عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا تھا اور جمعرات چھبیس اپریل کو فیصلہ سنانے کا اعلان کیا تھا اور وزیراعظم سے کہا تھا کہ وہ اس موقع پر عدالت میں حاضر ہوں۔

    جسٹس ناصر الملک کی سربراہی میں سات رکنی بینچ کے سامنے وزیِراعظم تیسری مرتبہ پیش ہوئے۔

    وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی جب عدالت پہنچے تو ان پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں۔

    اس موقع پر سپریم کورٹ اور اس کے اطراف سخت حفاظتی انتظامات کیے گئے۔

  2. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,140
    شکریہ
    2,103
    1,216 پیغامات میں 1,588 اظہار تشکر

    RE: وزیراعظم پاکستان ۔ مجرم قرار

    وزیراعظم سزا یافتہ مجرم ہیں، اخلاقی جرأت ہوتی تو مستعفی ہو جاتے: جماعت اسلامی


    - لاہور /کراچی (نمائندہ جسارت /اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منور حسن نے کہا ہے کہ وزیر اعظم میں تھوڑی بہت بھی اخلاقی جرات ہوتی تو اب تک مستعفی ہوچکے ہوتے ،وہ اب سزا یافتہ مجرم ہیں اور ملک کی سب سے بڑی عدالت نے نہ صرف انہیں سزا سنائی بلکہ بڑے باوقار طریقے سے اپنے فیصلے پر عمل درآمد بھی کروایا ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر اعظم کے خلاف توہین عدالت کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا۔ سید منور حسن نے کہا کہ عدلیہ نے 4سال تک حکومت کے ساتھ انتہائی تحمل اور بردباری کا رویہ رکھا لیکن حکمرانوں کی طرف سے عدلیہ کی مسلسل تضحیک اور اس کے ساتھ محاذ آرائی کا افسوسناک اور جارحانہ رویہ جاری رہا، پیپلز پارٹی کا ٹریک ریکارڈ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں اور ماضی کی طرح فیصلے کے خلاف توڑپھوڑ اور جلائو گھیرائو پر اتر آئی ہے اور ملک کو 71ء جیسے سانحے سے دوچار کرنے کی کوشش کررہی ہے لیکن اب قوم پیپلز پارٹی کو ملک توڑنے کا موقع نہیں دے گی ۔اب فرینڈلی اپوزیشن کو بھی یہ فیصلہ کرنا پڑے گا کہ وہ زرداری کو مزید صدر رکھ کرملکی سلامتی کو دائو پر لگانا چاہتے ہیں یا حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کرتے ہوئے عوامی امنگوں کو پورا کریں گے ۔علاوہ ازیں جماعت اسلامی سندھ کے امیر و سابق رکن قومی اسمبلی اسداللہ بھٹو ایڈووکیٹ نے وزیراعظم گیلانی کی سزا پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے توہین عدالت کا مرتکب ہوکر پاکستان کی تاریخ میں ایک نئے سیاہ باب کا اضافہ کیا ہے۔ عدالتی کارروائی کو سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کرنا افسوس ناک امر ہے۔سزا ملنے کے بعد وہ اخلاقی طور پر مزید اپنے منصب پر فائز نہیں رہ سکتے۔تاہم وزیراعظم کومحض 30 سیکنڈ کی سزا سنانے والے فیصلے سے قوم کے اندر ابہام موجود ہے۔واضح کیا جائے کہ آیا 30سیکنڈ کی سزا جرم معمولی ہونے کی وجہ سے دی گئی ہے یا مجرم کے ’’بڑے‘‘ہونے کی وجہ سے دی گئی۔ اسداللہ بھٹو نے مزید کہا کہ گیلانی فوری طور پر مستعفی ہوجائیں۔فرد جرم عائد ہونے کے باوجود ایک سزا یافتہ شخص کا کابینہ اجلاس کی صدارت کرنا آئین، ملک و قوم کے ساتھ مذاق کے مترادف ہوگا۔ملکی مفاد اور جمہوریت کے فروغ کیلئے تمام اداروں کا احترام اور عدالتی فیصلے پر عمل کرنا ہوگا۔

  3. #3
    ناظم سیما کا اوتار
    تاريخ شموليت
    May 2011
    پيغامات
    2,514
    شکریہ
    409
    125 پیغامات میں 159 اظہار تشکر

    RE: وزیراعظم پاکستان ۔ مجرم قرار


  4. #4
    رکنِ خاص نگار کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2011
    پيغامات
    5,360
    شکریہ
    663
    357 پیغامات میں 424 اظہار تشکر

    RE: وزیراعظم پاکستان ۔ مجرم قرار

    ہم لوگوں کو یہ لوگ دوبارہ اُلو بنائینگے اور ہم بھی اندھے اور بہرے بن کر
    انہی کو منتخب کرینگے۔۔میں بعض دفعہ سوچتا ہوں کہ آخر ہم یہ بڑے بڑے
    نصیحت آموز کالم کن لوگوں کے لکھ رہے ہیں۔
    جو قوم خود مین کوئی تبدیلی لانا نہیں چاہتی تو خدا بھی ایسی قوموں کا ساتھ
    نہیں دیا کرتا۔۔لاکھ نصیحتیں کر لو لیکن اس قوم کا کچھ نہیں ہونے والا۔۔
    ہر انسان اس کو صرف پڑھنے تک ہی عقل رکھتا ہے۔۔۔سیاست نام ہی ہے،دھوکا بازی،فریب اور لُوٹ مار،پانچ سال کے لیے آؤ اور اپنی جیبیں بھر کے چلے جاؤ۔۔
    ایک تقریر کرو اور ساری گندگی صاف کر لو۔۔یہی لوگ پھر بیوقوف بن کر
    آپ کو دوبارہ کُرسی پر بٹھا دینگے۔۔۔
    سب سے اہم چیز اتفاق ہے لیکن یہ چیز نام کی بھی ہم میں نہیں،سو دن رات محنت
    کر لو لیکن کچھ فائدہ نہیں۔۔سیاست میں الجھنے سے تو اچھا ہے کہ انسان کہیں بیٹھ کر اللہ کا ذکر کرے۔۔۔

    آپکا شکریہ

  5. #5
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    831
    شکریہ
    246
    110 پیغامات میں 168 اظہار تشکر

    RE: وزیراعظم پاکستان ۔ مجرم قرار

    السلام علیکم ۔
    بہت بہت شکریہ بے باک بھای ۔
    سچ لکھا آپ نے نگار جی واقع ہی یہ سیاست دان پھر ہم کو بے وقوف بنا رہے ہیں اور اگر ہمارہ یہی حال رہا تو بناتے رہیں گے پیپلز پارٹی بھٹو کے جانے کے بعد ہمیشہ لڑاؤ اور حکومت کرو کی پالیسی پر گامزن ہے کبھی یہ سندھ کارڈ استمال کرتے ہیں اب سرایکی کارڈ استمال کر رہے ہیں اور ہمیشہ کوی نہ کوی کارڈ استمال کرتے رہیں گے اب یہ عوام پر ہے کہ کب تک بے وقوف بنتے رہیں گے لگتا تو یہی ہے کہ پاکستانی عوام بے وقوف بنتی رہے گی ۔
    سوچنے کی بات یہ ہے کہ کیا ہم پاکستانی قوم خاموشی سے تماشہ دیکھتے رہیں اور یہ سب کچھ جو ہو رہا ہونے دیں یا قوم کو متحرک ہونا چاہیے اگر ہم غیر جانبدار رہے نیند میں رہے تو ہم سے بڑا مجرم کوی اور نہیں ہوگا ہم اپنے ملک و قوم اور آنے والی نسلوں کے مجرم ہون گے یہ تو شتر مرغ والی بات ہو گی کہ خطرے میں ہم آپنے آنکھیں ریت میں دبا لیں خواہ ہم تباہ برباد ہو جایں کیا ہم ان کو کھلی چھٹی دے دیں کہ جو دل چاہے کریں ہمیں کیا ہم نے تو صرف اپنی دال روٹی چلانی ہے ایسے تو دال روٹی بھی نہیں ملے گی ایسے خاموش رہ کر تو ہم ان کے جرم میں برابر کے شریک بن رہے ہیں ووٹ کا ستمال نہ کرکے بھی ہم ان کے جرم میں برابر کے شریک بن جاتے ہیں ۔
    اب سوچنے کا وقت ہے اب جاگنے کا وقت ہے اب اپنوں آنے والی نسلوں کے لیے کچھ کرنے کا وقت ہے اب کچھ اپنے لیے کرنے کا وقت ہے ۔
    اے بزرگو بھایو بہنوں بیٹو اب وقت ہے جاگ جایں اچھے اور برے کی تعمیز کریں اب ان بے غیرتوں کو مزید وقت نہ دیں اب ان کو لوٹ مار سے روکیں اب ان کے برے کرتوتوں کے سامنے دیوار بن جایں یہی وقت ہے جاگنیں کا نہیں تو آنے والی نسلیں آپ کو برے لفظوں میں یاد کرے گی تاریخ میں ہم سب کا نام سیاہ حروف میں لکھا جاے گا ۔
    اللہ تبارک تعالی ہم پر اپنی رحمت کے دروازے بند کر دے گا کیوں کہ ہم خود شریک جرم ہیں اگر برے کو برا نہ کہا تو ہم خود برے ہیں اے پاکستانی قوم جاگ جا اب یہی وقت ہے ۔
    وسلام

متشابہہ موضوعات

  1. جوابات: 41
    آخری پيغام: 03-07-2013, 10:34 PM
  2. جوابات: 4
    آخری پيغام: 01-17-2013, 08:16 PM
  3. وزیرستان۔۔۔علامت و تجرید کے آئینے میں
    By نذر حافی in forum اردو ادب
    جوابات: 2
    آخری پيغام: 01-08-2013, 11:19 PM
  4. وزیرستان میں امریکی ڈارون حملے
    By بےباک in forum آج کی خبر
    جوابات: 0
    آخری پيغام: 08-25-2012, 03:26 PM
  5. جوابات: 0
    آخری پيغام: 12-08-2010, 08:33 PM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University