نتائج کی نمائش 1 تا: 9 از: 9

موضوع: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

  1. #1
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,171
    شکریہ
    2,134
    1,241 پیغامات میں 1,615 اظہار تشکر

    قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    السلام علیکم ۔اللہ تعالی قرآن مجید میں فرماتے ہیں ،
    وَالْأَنْعَامَ خَلَقَهَا لَكُمْ فِيهَا دِفْءٌ وَمَنَافِعُ وَمِنْهَا تَأْكُلُونَO
    5. اور اُسی نے تمہارے لئے چوپائے پیدا فرمائے، ان میں تمہارے لئے گرم لباس ہے اور (دوسرے) فوائد ہیں اور ان میں سے بعض کو تم کھاتے (بھی) ہوo
    6. وَلَكُمْ فِيهَا جَمَالٌ حِينَ تُرِيحُونَ وَحِينَ تَسْرَحُونَO
    6. اور ان میں تمہارے لئے رونق (اور دل کشی بھی) ہے جب تم شام کو چراگاہ سے (واپس) لاتے ہو اور جب تم صبح کو (چرانے کے لئے) لے جاتے ہوo
    7. وَتَحْمِلُ أَثْقَالَكُمْ إِلَى بَلَدٍ لَّمْ تَكُونُواْ بَالِغِيهِ إِلاَّ بِشِقِّ الْأَنفُسِ إِنَّ رَبَّكُمْ لَرَؤُوفٌ رَّحِيمٌO
    7. اور یہ (جانور) تمہارے بوجھ (بھی) ان شہروں تک اٹھا لے جاتے ہیں جہاں تم بغیر جانکاہ مشقت کے نہیں پہنچ سکتے تھے، بیشک تمہارا رب نہایت شفقت والا نہایت مہربان ہے


    بہت سے مسلمان جانوروں کے ساتھ برتاؤ کے معاملے میں بے دردی بھرا رویہ اپناتے ہیں اور یہ تاثر دیتا ہے کہ شاید ان کے مذہب میں جانوروں کے متعلق کوئی سوچ بچار نہیں کیا جاتا ہے۔تاہم جب ہم قرآن اور حدیث کا مطالعہ کرتے ہیں تو ہمیں حیرانی کے ساتھ ہی خوشی بھی ہوتی ہے کہ دراصل حقیقت اس کے بر عکس ہے۔ اسلام یقینا جانوروں کو اہمیت دیتا ہے اوران کی دیکھ بھال کے طریقے کو بھی اہمیت دیتا ہے۔قرآن میں پانچ سورتیں ایسی ہیں جن کے عنوانات جانوروں کے ناموں پر ہیں۔اس کے علاوہ ، جانوروں کا ذکر پورے قرآن میں پایا جاتا ہے۔

    [ البعير , البقر , الثعبان , الجراد , الجوارح , الحام , الحمولة , الحية , الخنازير , القردة , القمل , المعز , الناقة , النحل , الهدهد , الأبابيل , الأنعام , البحيرة , السلوی ۔ البعوضة , الدابة , الذباب , الصافنات , الطائر , البغال , الجمال , الجياد , الحمار , الحوت , الفيل , القسورة , الكلب , الموريات , النعجة , النمل , الوصيلة , الإبل , البدن, الخيل , الذئب , دابة الأرض ( الدودة ) , السائبة , الضأن , العاديات , العجل , العشار , الغنم , العرم , العنكبوت , الغراب , الفراش )
    اگلے مضامین میں ان حیوانات پر تفصیل سے لکھنے کی کوشش کریں گے ،
    ان شاءاللہ

  2. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,171
    شکریہ
    2,134
    1,241 پیغامات میں 1,615 اظہار تشکر

    RE: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    [size=xx-large]البعوضة ۔ مچھر [/size]
    البقرة(26)۔(إِنَّ اللَّهَ لا يَسْتَحْيِي أَنْ يَضْرِبَ مَثَلاً مَا بَعُوضَةً فَمَا فَوْقَهَا فَأَمَّا

    الَّذِينَ آمَنُوا فَيَعْلَمُونَ أَنَّهُ الْحَقُّ مِنْ رَبِّهِمْ وَأَمَّا الَّذِينَ كَفَرُوا فَيَقُولُونَ مَاذَا

    أَرَادَ اللَّهُ بِهَذَا مَثَلاً يُضِلُّ بِهِ كَثِيراً وَيَهْدِي بِهِ كَثِيراً وَمَا يُضِلُّ بِهِ إِلَّا الْفَاسِقِينَ)

    بیشک اللہ اس بات سے نہیں شرماتا کہ (سمجھانے کے لئے) کوئی بھی مثال بیان فرمائے (خواہ) مچھر کی ہو یا (ایسی چیز کی جو حقارت میں) اس سے بھی بڑھ کر ہو، تو جو لوگ ایمان لائے وہ خوب جانتے ہیں کہ یہ مثال ان کے رب کی طرف سے حق (کی نشاندہی) ہے، اور جنہوں نے کفر اختیار کیا وہ (اسے سن کر یہ) کہتے ہیں کہ ایسی تمثیل سے اللہ کو کیا سروکار؟ (اس طرح) اللہ ایک ہی بات کے ذریعے بہت سے لوگوں کو گمراہ ٹھہراتا ہے اور بہت سے لوگوں کو ہدایت دیتا ہے اور اس سے صرف انہی کو گمراہی میں ڈالتا ہے جو (پہلے ہی) نافرمان ہیں ۔۔
    [size=xx-large]
    الخیل ۔۔البغال ۔۔الحمیر ۔گھوڑے ، خچر ،اور گدھے
    [/size]
    . وَالْخَيْلَ وَالْبِغَالَ وَالْحَمِيرَ لِتَرْكَبُوهَا وَزِينَةً وَيَخْلُقُ مَا لاَ تَعْلَمُونَOالنحل(8
    اور (اُسی نے) گھوڑوں اور خچروں اور گدھوں کو (پیدا کیا) تاکہ تم ان پر سواری کر سکو اور وہ (تمہارے لئے) باعثِ زینت بھی ہوں، اور وہ (مزید ایسی بازینت سواریوں کو بھی) پیدا فرمائے گا جنہیں تم (آج) نہیں جانتے

    ۔۔۔۔۔۔۔۔نوٹ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    کیا ہر حیوان پر اتنی تفصیل کافی ہے یا مزید لکھا جائے ؟؟؟؟؟
    باقی اگلی قسط میں ،ان شاءاللہ ،
    ،

  3. #3
    ناظم اذان کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Jan 2011
    پيغامات
    1,898
    شکریہ
    138
    108 پیغامات میں 161 اظہار تشکر

    RE: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    بہت ہی اچھی شیئرنگ ہے
    جزاک اللہ

  4. #4
    ناظم
    تاريخ شموليت
    Feb 2011
    پيغامات
    3,081
    شکریہ
    21
    91 پیغامات میں 134 اظہار تشکر

    RE: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    میرے خیال میں ہمارے مذہب میں اوپرلگی تصاویرکی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ قرآن مجیدکی آیات کے آدب کوملحوظ خاطررکھتے ہوئے ، آیات کے ساتھ لگی ان تصاویرکوفورآ ہٹادیاجائے۔

  5. #5
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,171
    شکریہ
    2,134
    1,241 پیغامات میں 1,615 اظہار تشکر

    RE: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    قرآنی آیات کے تقدس کی وجہ سے تصاویر ہٹا لی ہیں ، ، جیسا آپ نے ارشاد فرمایا تھا
    بچوں کو سمجھانے کے لیے تصاویر منع نہیں ہیں ،یہ میرا خیال ہے ،
    بہت بہت شکریہ ناصر شاھین ،
    مشورہ کا بہت بہت شکریہ ،

  6. #6
    رضاکار عزیزامین کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Apr 2011
    مقام
    canada ,edmoton,AB
    پيغامات
    154
    شکریہ
    22
    30 پیغامات میں 40 اظہار تشکر

    RE: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    اگر ممکن ہو تو مزید تفصیل بہتر ہے بے باک جی

  7. #7
    رکنِ خاص بےلگام کا اوتار
    تاريخ شموليت
    May 2012
    پيغامات
    11,245
    شکریہ
    2
    14 پیغامات میں 23 اظہار تشکر

    RE: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    بہت اچھے

  8. #8
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,171
    شکریہ
    2,134
    1,241 پیغامات میں 1,615 اظہار تشکر

    جواب: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    قرآن مجید میں تقریباً ۳۵ حیوانات کا نام آیا ہے۔ قرآن مجید میں جن پرندوں اور حشرات کا نام آیا ہے وہ حسب ذیل ہیں:
    سلوی= بٹیر{بقرہ/۵۷}، بعوض=مچھر{بقرہ/۲۶} ذباب=مکھی{حج/۷۳}، نحل=شہد کی مکھی {نحل/۶۸}، عنکبوت=مکڑی {عنکبوت/۴۱}، جراد=ٹڈی {اعراف/۱۳۳}، ھدھد=ہد ہد{نمل/۲۷}، غراب=کوا{مائدہ/۳۲}، ابابیل=ابابیل{فیل/۳}، نمل=چیونٹی{نمل/۱۸}، فراش=تتلی{قارعہ/۴}، قمل=جوں{اعراف/۱۳۳}
    مذکورہ موارد کے علاوہ چند دوسرے حیوانات کا بھی قرآن مجید میں نام آیا ہے۔ جیسے:
    قردہ= بندر{بقرہ/۶۵}، بغال=خچر{نحل/۸}، غنم، نعجہ، ضان و معز= گوسفند ، بکرا یا بھیڑ {انعام/۱۴۳-۱۴۶}، ذئب=بھیڑیا {یوسف/۱۴}، بعیر و جمل= اونٹ {یوسف/۶۵ و اعراف/۴۰۔۔}، قسورہ= شیر{مدثر/۵۱}، خیل و جیاد {جمع جواد} و صافنات {جمع صافنہ} = اسب {نحل/۸}، بقر=گائے {بقرہ /۷۰}، عجل= گوسالہ ۔بچھڑا {ہود/۲۹}، ثعبان= اژدھا {اعراف/۱۰۷}، حمار و حمیر=گدھا{نحل/۸، بقرہ/۲۵۹}، خنزیر= سور{بقرہ/۱۷۳}، کلب = کتا{اعراف/۱۷۶}، نون و حوت= مچھلی {انبیاء/۸۷، کہف/۶۳}، ضفادع= مینڈک {اعراف/۱۳۳}، فیل= ہاتھی {فیل/۱}۔ اسی طرح جہالت کے زمانے کے عربوں میں رائج اونٹ اور بھیڑ کی مختلف نسلوں کے نام لیے جا سکتے ہیں، جیسے: بحیرہ، سائبہ، جام، وصیلہ {مائدہ/۱۰۳}
    ہم کو کمال حاصل ہے غم سے خوشیاں نچوڑ لیتے ہیں ۔
    اردو منظر ٰ معیاری بات چیت

  9. #9
    معاون
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    34
    شکریہ
    8
    15 پیغامات میں 15 اظہار تشکر

    جواب: قرآن مجید میں حیوانات کا ذکر

    Thanks that is an informative post

متشابہہ موضوعات

  1. ’صارف حیوان‘نہیں ’انسان ‘بنائیے
    By گلاب خان in forum قلم و کالم
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 12-16-2012, 10:31 PM
  2. یہ جو دیوانے سے دو چار نظر آتے ہیں
    By تانیہ in forum متفرق شاعری
    جوابات: 1
    آخری پيغام: 04-03-2012, 09:57 AM
  3. جوابات: 2
    آخری پيغام: 02-04-2012, 03:48 PM
  4. جوابات: 0
    آخری پيغام: 12-08-2010, 07:54 PM
  5. اپنے اندر چھپے یورینیم کو دریافت کریں
    By گلاب خان in forum جدید دنیا اور سائنس
    جوابات: 0
    آخری پيغام: 11-26-2010, 08:45 PM

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University