نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: جدائی

  1. #1
    مبتدی
    تاريخ شموليت
    Dec 2010
    پيغامات
    17
    شکریہ
    0
    0 پیغامات میں 0 اظہار تشکر

    جدائی

    اشک گرتے ہیں میری سانس سنبھل جاتی ہے
    دے کر اک درد نیا شام نکل جاتی ہے۔۔۔
    تجھ کو دیکھوں تو میرے درد کو ملتا ہے سکون
    تجھ سے بچھڑوں تومیری جان نکل جاتی ہے۔۔۔
    عشق کچھ ایسے مٹاتا ہے نشان ہستی
    جیسے ہر رات اجالے کو رات نگل جاتی ہے۔۔۔۔
    تو اگر دل پر میرے ہاتھ ہی رکھ دے عرفان
    ٹوٹتی سانس بھی کچھ دیر سنبھل جاتی ہے۔۔۔
    زخم بھرتا ہی نہیں تیری جدائی کا مگر
    پھر تیری یاد نیا درد اگل جاتی ہے۔۔۔۔


    [size=large] عرفان[/size]

  2. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,204
    شکریہ
    2,188
    1,260 پیغامات میں 1,635 اظہار تشکر

    RE: جدائی

    [size=medium][align=center]زخم بھرتا ہی نہیں تیری جدائی کا مگر
    پھر تیری یاد نیا درد اگل جاتی ہے۔[/align]

    بہت ہی خوب ، شاندار ،

    ماشاءاللہ عرفان جی آپ نے بہت ہی پیاری غزل ہمیں پڑھنے کے لئے دی، دل خوش ھوا ، ایسا کام جاری رہے ،
    [/size]

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University