نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: زباں میں نرمی، طبیعت میں سادگی رکھنا۔۔۔۔

  1. #1
    منتظم اعلی
    تاريخ شموليت
    Feb 2013
    پيغامات
    234
    شکریہ
    291
    119 پیغامات میں 184 اظہار تشکر

    زباں میں نرمی، طبیعت میں سادگی رکھنا۔۔۔۔

    زباں میں نرمی، طبیعت میں سادگی رکھنا
    ہمیشہ جذبہ امدادِ باہمی رکھنا

    لبوں پہ لاکھ سمندر کی خامشی رکھنا
    دل و نگاہ میں طوفانِ آگہی رکھنا

    یہاں تو ہارنے والا ہی جیت جاتا ہے
    کبھی انا پہ نہ بنیاد عاشقی رکھنا

    اگر یہ جاننا چاہیں کہ کون کیسا ہے
    بچا کے دامنِ دل خود کو اجنبی رکھنا

    فسانہِ دل خانہ خراب کا عنواں
    ستم ظریفی احساسِ کمتری رکھنا

    یہ لین دین کا دھندا نہیں ہے اے گوہر
    کسی سے رکھنا تو بے لوث دوستی رکھنا
    نحن عشاق الحسین ع
    اگر آپ حق پر کھڑے ہیں توآپ کو چلا کربات کرنے کی ضرورت نہیں
    اور اگر آپ حق پر نہیں ہیں تو چلا کربات کرنے کا کوئی فائدہ نہیں


  2. #2
    ناظم خاص تانیہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    مقام
    گجرات
    پيغامات
    7,869
    شکریہ
    949
    880 پیغامات میں 1,107 اظہار تشکر

    جواب: زباں میں نرمی، طبیعت میں سادگی رکھنا۔۔۔۔

    واہ جی ۔۔۔بہت خوب



آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University