نتائج کی نمائش 1 تا: 3 از: 3

موضوع: جب بھی گھر کی چھت پر جائیں ناز دکھانے آ جاتے ہیں

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Nov 2011
    پيغامات
    527
    شکریہ
    31
    49 پیغامات میں 71 اظہار تشکر

    جب بھی گھر کی چھت پر جائیں ناز دکھانے آ جاتے ہیں

    جب بھی گھر کی چھت پر جائیں ناز دکھانے آ جاتے ہیں
    کیسے کیسے لوگ ہمارے جی کو چلانے آ جاتے ہیں

    دن بھر جو سورج کے ڈر سے گلیوں میں چھُپ رہتے ہیں
    شام آتے ہی آنکھوں میں وہ رنگ پرانے آ جاتے ہیں

    جن لوگوں نے اُن کی طلب میں صحراؤں کی دھول اُڑائی
    اب یہ حسیں اُن کی قبروں پر پھول چڑھانے آ جاتے ہیں

    کون سا وہ جادو ہے جس سے غم کی اندھیری، سرد گپھا میں
    لاکھ نسائی سانس دلوں کے روگ مٹانے آ جاتے ہیں

    زے کے ریشمیں رومالوں کو کس کس کی نظروں سے چھُپائیں
    کیسے ہیں وہ لوگ جنھیں یہ راز چھُپانے آ جاتے ہیں

    ہم بھی منیر اب دُنیا داری کر کے وقت گزاریں گے
    ہوتے ہوتے جینے کے بھی لاکھ بہانے آ جاتے ہیں


  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے ایم-ایم کا شکریہ ادا کیا:

    نگار (11-25-2013)

  3. #2
    رکنِ خاص نگار کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2011
    پيغامات
    5,360
    شکریہ
    663
    357 پیغامات میں 424 اظہار تشکر

    جواب: جب بھی گھر کی چھت پر جائیں ناز دکھانے آ جاتے ہیں

    ہم بھی منیر اب دُنیا داری کر کے وقت گزاریں گے
    ہوتے ہوتے جینے کے بھی لاکھ بہانے آ جاتے ہیں


    بہترین شاعری ارسال کرنے پہ آپ کا بہت بہت شکریہ

  4. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے نگار کا شکریہ ادا کیا:

    ایم-ایم (11-25-2013)

  5. #3
    ناظم خاص تانیہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    مقام
    گجرات
    پيغامات
    7,922
    شکریہ
    952
    882 پیغامات میں 1,109 اظہار تشکر

    جواب: جب بھی گھر کی چھت پر جائیں ناز دکھانے آ جاتے ہیں

    واہ واہ۔۔۔۔بہت خوب ۔۔۔نائس شیئرنگ



آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University