نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: آنسوؤں کے ساتھ سب کچھ بہہ گیا

  1. #1
    ناظم جاذبہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2013
    مقام
    کراچی ، پاکستان
    پيغامات
    603
    شکریہ
    814
    382 پیغامات میں 574 اظہار تشکر

    آنسوؤں کے ساتھ سب کچھ بہہ گیا



    آنسوؤں کے ساتھ سب کچھ بہہ گیا
    دل میں سناٹا سا باقی رہ گیا

    چھوڑ آیا ہوں زمین و آسماں
    فاصلہ اب اور کتنا باقی رہ گیا

    رفتہ رفتہ بجھ گئے سارے چراغ
    اک چہرہ جھلملاتا ' رہ گیا

    بستیاں دھندلا گئیں؛ پھر کھو گئیں
    روشنی کا چہرہ پیچھے رہ گیا





  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے جاذبہ کا شکریہ ادا کیا:

    بےباک (01-27-2014)

  3. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,161
    شکریہ
    2,126
    1,234 پیغامات میں 1,606 اظہار تشکر

    جواب: آنسوؤں کے ساتھ سب کچھ بہہ گیا


    آنسوؤں کے ساتھ سب کچھ بہہ گیا
    دل میں سناٹا سا باقی رہ گیا

    چھوڑ آیا ہوں زمین و آسماں
    فاصلہ اب اور کتنا باقی رہ گیا

    بہت ہی خوب ، شاندار
    ہم کو کمال حاصل ہے غم سے خوشیاں نچوڑ لیتے ہیں ۔
    اردو منظر ٰ معیاری بات چیت

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University