نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    5,512
    شکریہ
    654
    715 پیغامات میں 742 اظہار تشکر

    آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن


    اِس کا سوچا بھی نہ تھا اب کے جو تنہا گزری
    وہ قیامت ہی غنیمت تھی جو یکجا گزری

    آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن
    اک مری بات نہیں تجھ پہ بھی کیا کیا گزری

    میں تو صحرا کی تپش، تشنہ لبی بھول گیا
    جو مرے ہم نفسوں پر لب ِدریا گزری

    آج کیا دیکھ کے بھر آئی ہیں تیری آنکھیں
    ہم پہ اے دوست یہ ساعت تو ہمیشہ گزری

    میری تنہا سفری میرا مقدر تھی
    فراز
    ورنہ اس شہر ِتمنا سے تو دنیا گزری​




  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    بےباک (06-11-2014)

  3. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,205
    شکریہ
    2,192
    1,260 پیغامات میں 1,635 اظہار تشکر

    جواب: آ گلے تجھ کو لگا لوں میرے پیارے دشمن

    آج کیا دیکھ کے بھر آئی ہیں تیری آنکھیں
    ہم پہ اے دوست یہ ساعت تو ہمیشہ گزری
    بہت خوب
    ہم کو کمال حاصل ہے غم سے خوشیاں نچوڑ لیتے ہیں ۔
    اردو منظر ٰ معیاری بات چیت

  4. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے بےباک کا شکریہ ادا کیا:

    حبیب صادق (06-11-2014)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University