نتائج کی نمائش 1 تا: 2 از: 2

موضوع: نہ دید ہے نہ سخن، اب نہ حرف ہے نہ پیام

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    2,942
    شکریہ
    649
    709 پیغامات میں 735 اظہار تشکر

    نہ دید ہے نہ سخن، اب نہ حرف ہے نہ پیام

    نہ دید ہے نہ سخن، اب نہ حرف ہے نہ پیام

    کوئی بھی حیلہ تسکین نہیں اور آس بہت ہے
    اُمیدِ یار، نظر کا مزاج، درد کا رنگ

    تم آج کچھ بھی نہ پُوچھو کہ دل اُداس بہت ہے

  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    جاذبہ (06-12-2014)

  3. #2
    ناظم جاذبہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2013
    مقام
    کراچی ، پاکستان
    پيغامات
    603
    شکریہ
    814
    382 پیغامات میں 575 اظہار تشکر

    جواب: نہ دید ہے نہ سخن، اب نہ حرف ہے نہ پیام

    واہ واہ!!!! بہت خوب حضرت کیا کہنے
    جاذبہ


    اردومنظرفورم

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University