نتائج کی نمائش 1 تا: 4 از: 4

موضوع: وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے

  1. #1
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    5,512
    شکریہ
    654
    715 پیغامات میں 742 اظہار تشکر

    وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے



    وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے
    سب دوست ہمیں پیارے ہیں مگر وہ جان سے پیارا کیسا ہے
    شب بزمِ حریفاں سجتی ہے یا شام ڈھلے سو جاتے ہیں
    یاروں کی بسر اوقات ہے کیا، ہر انجمن آرا کیسا ہے
    جب بھی میخانے بند ہی تھے اور وا درِ زنداں رہتا تھا
    اب مفتیِ دیں کیا کہتا ہے، موسم کا اشارہ کیسا ہے
    میخانے کا پندار گیا، پیمانے کا معیار کہاں
    کل تلخیَ مے بھی کھلتی تھی، اب زہر گوارا کیسا ہے
    وہ پاس نہیں، احساس تو ہے، اک یاد تو ہے، اک آس توہے
    دریائے جدائی میں دیکھو، تنک کا سہارا کیسا ہے
    ملکوں ملکوں گھومے ہیں بہت، جاگے ہیں بہت، روئے ہیں بہت
    اب تم کو بتائیں کیا یارو، دنیا کا نظارا کیسا ہے
    یہ شامِ ستم کٹتی ہی نہیں، یہ ظلمتِ شب گھٹتی ہی نہیں
    میرے بد قسمت لوگوں کی قسمت کا ستارہ کیسا ہے
    کیا کوئے نگاراں میں اب بھی عشاق کا میلہ لگتا ہے
    اہلِ دل نے قاتل کے لئے مقتل کو سنوارا کیسا ہے
    کیا اَب بھی ہمارے گاؤں میں گھنگھرو ہیں ہَوا کے پاؤں میں
    یا آگ لگی ہے چھاؤں میں، اَب وقت کا دھارا کیسا ہے
    قاصد کے لبوں پر کیا اب بھی آتا ہے ہمارا نام کبھی
    وہ بھی تو خبر رکھتا ہو گا، یہ جھگڑا سارا کیسا ہے
    ہر ایک کشیدہ قامت پر کیا اب بھی کمندیں پڑتی ہیں
    جب سے وہ مسیحا دار ہُوا، ہر درد کا مارا کیسا ہے
    کہتے ہیں کہ گھر اَب زنداں ہیں، سنتے ہیں کہ زنداں مقتل ہیں
    یہ جبر خدا کے نام پہ ہے، یہ ظلم خدارا کیسا ہے
    پندار سلامت ہے کہ نہیں، بس یہ دیکھو، یہ مت دیکھو
    جاں کتنی ریزہ ریزہ ہے، دل پارا پارا کیسا ہے
    اے دیس سے آنے والے مگر تم نے تو نہ اتنا بھی پوچھا
    وہ کوئی جسے بن باس ملا، وہ درد کا مارا کیسا ہے
    ٭٭٭



  2. #2
    منتظم اعلی بےباک کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Nov 2010
    پيغامات
    6,205
    شکریہ
    2,192
    1,260 پیغامات میں 1,635 اظہار تشکر

    جواب: وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے


    وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے

    سب دوست ہمیں پیارے ہیں مگر وہ جان سے پیارا کیسا ہے
    شب بزمِ حریفاں سجتی ہے یا شام ڈھلے سو جاتے ہیں
    یاروں کی بسر اوقات ہے کیا، ہر انجمن آرا کیسا ہے
    جب بھی میخانے بند ہی تھے اور وا درِ زنداں رہتا تھا
    اب مفتیِ دیں کیا کہتا ہے، موسم کا اشارہ کیسا ہے
    شکریہ جناب ، امجد اسلام امجد کا شاندار کلام پیش کیا ،
    ہم کو کمال حاصل ہے غم سے خوشیاں نچوڑ لیتے ہیں ۔
    اردو منظر ٰ معیاری بات چیت

  3. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل 2 اراکین نے بےباک کا شکریہ ادا کیا:

    حبیب صادق (06-15-2014),جاذبہ (06-15-2014)

  4. #3
    رکنِ خاص
    تاريخ شموليت
    Jun 2014
    پيغامات
    5,512
    شکریہ
    654
    715 پیغامات میں 742 اظہار تشکر

    جواب: وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے

    اقتباس اصل پيغام ارسال کردہ از: بےباک پيغام ديکھيے
    شکریہ جناب ، امجد اسلام امجد کا شاندار کلام پیش کیا ،
    نئی مسافت کا عہد نامہ

    نابینا شہر میں آئینہ کی نظموں کا انتخاب

    یہ کلام میرے پاس درج بالا عنوان سے احمد فراز کے فولڈر میں موجود ہے

  5. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے حبیب صادق کا شکریہ ادا کیا:

    جاذبہ (06-15-2014)

  6. #4
    ناظم جاذبہ کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2013
    مقام
    کراچی ، پاکستان
    پيغامات
    603
    شکریہ
    814
    382 پیغامات میں 575 اظہار تشکر

    جواب: وہ شہر جو ہم سے چھوٹا ہے، وہ شہر ہمارا کیسا ہے

    جاذبہ


    اردومنظرفورم

  7. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے جاذبہ کا شکریہ ادا کیا:

    حبیب صادق (06-15-2014)

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University