نتائج کی نمائش 1 تا: 3 از: 3

موضوع: اے ماں! تڑپ رہا ہوں

  1. #1
    رکنِ خاص نگار کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2011
    پيغامات
    5,360
    شکریہ
    663
    357 پیغامات میں 424 اظہار تشکر

    اے ماں! تڑپ رہا ہوں

    اے ماں! تڑپ رہا ہوں
    مجھے گود میں اٹھا لے
    میرے پاس تو ہے سب کچھ
    خود ہاتھوں سے کھلا دے

    دنیا کی کشمکش میں
    میں کب سے تشنہ لب ہوں
    مجھے پھر سے زندہ کر دے
    خود ہاتھوں سے پلا کے

    گرتا، سنبھلتا، پھرتا
    کھاتا ہوں ٹھوکریں میں
    میرے سارے زخم بھر کے
    اپنے ہاتھوں سے شفا دے

    میں کھبی جو رویا کرتا
    مجھے دیکھ کر خفا تھی
    وہ جو قطرہ تھا سمندر
    زرہ پھر سے اک بہا دے

    تیرا چہرہ دیکھنے سے
    ہوئی بندگی خدا کی
    تو جو نظر بھر کے دیکھے
    تو خدا سے بھی ملا دے

    توصیف کیوں خفا ہو
    جنت کی آرزو میں
    ارے ماں کے قدم چومو
    تجھے جنتی بنا دیں

    happy-mom.jpg

  2. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے نگار کا شکریہ ادا کیا:

    saba (07-14-2014)

  3. #2
    رکنِ خاص saba کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Jan 2014
    پيغامات
    345
    شکریہ
    96
    195 پیغامات میں 273 اظہار تشکر

    جواب: اے ماں! تڑپ رہا ہوں


  4. اس مفید مراسلے کے لئے درج ذیل رُکن نے saba کا شکریہ ادا کیا:

    نگار (07-14-2014)

  5. #3
    رکنِ خاص نگار کا اوتار
    تاريخ شموليت
    Dec 2011
    پيغامات
    5,360
    شکریہ
    663
    357 پیغامات میں 424 اظہار تشکر

    جواب: اے ماں! تڑپ رہا ہوں

    بہت خوب صبا میڈم

    شیئرنگ کے لیے شکریہ محترمہ ۔۔۔۔۔

آپ کے اختيارات بسلسلہ ترسيل پيغامات

  • آپ نئے موضوعات پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ جوابات نہیں پوسٹ کر سکتے ہیں
  • آپ اٹیچمنٹ پوسٹ نہیں کر سکتے ہیں
  • آپ اپنے پیغامات مدون نہیں کر سکتے ہیں
  •  
Cultural Forum | Study at Malaysian University